پانچ معززججزنے ایک جنبش قلم سے آپ کے وزیراعظم کوگھربھیج دیا۔۔۔ محمد نوازشریف

جہلم میں استقبالیہ کیمپ سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم محمد نوازشریف نے کہا ہے کہ پانچ معززججزنے ایک جنبش قلم سے آپ کے وزیراعظم کوچلتا کردیا،کرپشن ثابت نہ ہوئی تو کہا گیاکہ اپنے بیٹے کی کمپنی سے تنخواہ کیوں نہ لی؟پہلے دھرنے والے پھرملکہ برطانیہ کی وفاداری حلف اٹھانے والے مولوی کینیڈاسے آگئے،آپ ووٹ دیکرحکومت بدلتے ہیں ڈکٹیٹرایک منٹ میں پرچی پھاڑکرآپ کے ہاتھ میں تھمادیتاہے، پاکستانی قو م ان ڈکٹیٹروں سے ضرور حساب لے گی،جمہوری وزیراعظم کواوسطً ڈیڑھ سال جبکہ ڈکٹیٹروں کو دس دس سال حکومت ملی۔انہوںنے کہاکہ شانداراستقبال پرشکریہ اداکرنے کیلئے الفاظ نہیں۔
میں ۲۰۱۳ میں آپ کے پاس آیاتھا۔پاکستان کی معیشت تباہی کی طرف بڑھ رہی تھی۔ملک اندھیروں میں ڈوب چکاتھا۔غریبوں کاکوئی والی وارث نہیں تھا۔کارخانے بندہوگئے تھے۔ملک بدحالی کی ایک مثال پیش کررہاتھا۔سی این جی اسٹیشنوں پرلمبی لمبی قطاریں لگی ہوئی تھیں۔سی این جی راشن پرملتی تھی۔مزدوربے روزگارہورہے تھے۔لیکن میں نے ۲۰۱۳ میں عوام سے وعدہ کیاتھاکہ جان لڑادوں گاملک کوترقی کی جانب لے کرجائیں گے۔اندھیروں کوختم کرکے روشنیاں واپس لے کرآؤں گا۔اندھیرے غرق ہوگئے۔ روشنیاں واپس آرہی ہیں۔دن رات ایک کرکے ۲۰،۲۰مہینوں میں بجلی کے کارخانے بناکرچلایا۔
اب لوڈشیڈنگ ختم ہورہی ہے۔اگلے سال لوڈشیڈنگ کوخداحافظ کہہ دیاجائے گا۔پاکستان میں امن قائم کرنے کاوعدہ کیاتھا۔پاکستان میں امن واپس آچکاہے،کراچی کے حالات ٹھیک کرکے روشنیاں واپس لائے۔بلوچستان میں امن قائم کیا۔ان تما م پارٹیوں کوواپس بلایاجوکسی اورطرف جارہی تھیں۔ان کواکٹھاکرکے مخلوط حکومت بنائی۔ورنہ بلوچستان بربادہورہاتھا۔
مگرآج ملک میں امن بھی ہے اور پشاورسے کراچی تک موٹرویزبن رہی ہیں۔انہوں نے کہاکہ میں بتاناچاہتاہوں کہ پانچ ججوں نے ایک منٹ میں فارغ کردیا۔کروڑوں عوام کے ووٹوں کی یہ توہین ہے یانہیں؟پانچ معززججزنے ایک جنبش قلم سے آپ کے وزیراعظم کوچلتاکرتے ہیں۔یہ توہین آپ کوبرداشت ہے؟کس لیے کیا؟کیامیں نے کرپشن کی تھی؟ان ججزنے کہاتھاکہ نوازشریف نے کرپشن نہیں کی۔
توپھرقوم کوپوچھناچاہیے کہ اگرکرپشن نہیں کی توکیوں نااہل کیاگیا؟الحمداللہ میراگریبان اور آستینیں صاف ہیں۔کوئی کرپشن کادھبہ نہیں ہے۔یہ ہاتھ اور دل صاف ہے۔یہ دل پاکستان کی محبت سے سرشارہے۔ملکی امانت میں کبھی خیانت نہیں کی؟توپھرکیوں نکالامجھے؟جب کرپشن ،کک بیک یاکمیشن کادھبہ نہیں ہے توپھرکوئی مجھے سمجھائے کہ مجھے اس لیے نکالاگیا۔کہ میں پاکستان کی ترقی کوعروج پرلے کرجارہاتھا۔سی پیک آیا،امن قائم ہورہاتھا۔نوجوانوں کوروزگارمل رہاتھا۔ترقی ہورہی تھی۔وثوق سے کہتاہوں کہ اگرترقی کایہ سفرجاری رہتاتوایک ایک نوجوان کوروزگارمل جاتا۔خداجانتاہے مجھے اپنی فکرنہیں ہے بلکہ ان نوجوانوں کی فکرہے۔
کہ ان نوجوانوں کامستقبل تاریک نہ ہوجائے۔نوازشریف نے کہاکہ میں نوجوانوں کوپیغام دیتاہوں کہ مایوس نہ ہوناخداساتھ ہے نوازشریف اور قوم کی دعائیں آپ کے ساتھ ہیں۔انشاء اللہ پاکستان کامستقبل تاریک نہیں ہونے دیں گے۔