نواز شریف کے نا اہل ہوتے ہی ان کا کون سا قریبی ساتھی وزیراعظم بننے کی سفارش لے کر ایک اہم “طاقت “کے پاس جا پہنچا؟ حامد میر کا تہلکہ خیر انکشاف

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ملک کے معروف صحافی اور تجزیہ کار حامد میر نے انکشاف کیا ہے کہ پانامہ لیکس کیس پر سپریم کورٹ کا فیصلہ آتے ہی مسلم لیگ (ن ) کے ارکان قومی اور صوبائی اسمبلی کی بڑی تعداد ملک کی ایک اہم “اتھارٹی”کے پاس جا پہنچی ۔

یہ سب کے سب لوگ اپنی سیاسی وفادار ی تبدیل کر نا چاہتے تھے۔ میاں نواز شریف کے ایک انتہائی قریبی رہنما نے وزیر اعظم کیلئے ناموں کی فہرست ان کے حوالے کی اور کہا کہ جناب عالی اپنا دست شفقت میرے سر پر رکھ لیجیے جس پر اس کو آگے سے جوا ب دیا گیاکہ اس اتھارٹی کا سیاست سے کچھ بھی لینا دینا نہیں ہے۔ پھر بھی اگر یہ تاثر قائم ہو رہا ہے تو ہم یہ ثابت کریں گے کہ ایسا ہر گز نہیں ہے۔