’جسم کی چربی سے تنگ آکر میں نے یہ ایک چیز کھانا چھوڑ دی اور 41 کلو وزن کم کر ڈالا‘

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) موٹاپے سے نجات حاصل کرنا کچھ آسان کام نہیں۔ اکثراوقات تو مہنگے طریقہ ہائے علاج اور کڑی ورزشیں بھی مقصد کے حصول میں ناکام ہو جاتی ہیں، لیکن برطانیہ میں ایک خاتون اپنے کھانے کی عادات میں معمولی تبدیلی کرکے 41کلوگرام وزن کم کرنے میں کامیاب ہو گئی ہے اور اس کی یہ کہانی موٹاپے سے نبردآزمالوگوں کے لیے مددگار ثابت ہو گی۔ ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق جیما ٹریمین نامی اس 32سالہ خاتون کا وزن 114کلوگرام تک جا پہنچا تھا اور وہ گوشت اور چربی کا پہاڑ بن کر رہ گئی تھی۔ پھر اس نے روایتی طریقہ ہائے علاج کو آزمانے کی بجائے اپنی خوراک میں تبدیلی کرنے کا فیصلہ کیا۔

رپورٹ کے مطابق جیما نے اپنی خوراک سے ہر طرح کا گوشت، دودھ اور اس سے بنی اشیاءنکال دیں اور پھلوں اور سبزیوں کا استعمال زیادہ کرنے لگی۔ کچھ عرصہ تک وہ سبزی پکا کر کھاتی رہی لیکن اب وہ کئی کئی دن تک پکا ہوا کھانا نہیں کھاتی بلکہ پھلوں اورکچی سبزیوں پر گزارہ کرتی ہے۔یہ عادت اپنانے کے بعد چند مہینے میں اس کے وزن میں 41کلوگرام کمی واقع ہو گئی ہے۔جیما کا کہنا ہے کہ ”پہلی بیٹی کی پیدائش کے وقت تک میرا وزن بہت بڑھ چکا تھا، جس کی وجہ سے میں نے گھر سے نکلنا بھی چھوڑ دیا تھا۔ میری زندگی کسی راہب کی طرح ہو کر رہ گئی تھی لیکن پھر میں نے محسوس کیا کہ مجھے اپنی زندگی میں کچھ تبدیلی لانا ہو گی۔میں نے بھوکا رہنا شروع کر دیا۔ اس سخت ڈائٹنگ کی وجہ سے 4ماہ میں میرا وزن 19کلوگرام کم ہو گیا لیکن میں خود کو بیمار محسوس کرنے لگی۔ پھر میں نے اپنی خوراک سے گوشت، دودھ اور ہر طرح کی ڈیری مصنوعات نکال دیں اور صرف پھل اور سبزیاں کھانے لگی۔ اب میرا وزن بھی بہت زیادہ کم ہو گیا ہے اور میری صحت بھی بہترین ہے۔“

کیٹاگری میں : صحت