ہریکین ارما نے امریکی ریاستی فلوریڈا میں تباہی مچادی 60 لاکھ افراد بے گھر ،سینکڑوں ہلاک

میامی(ویب ڈیسک)ہریکین ارما نے امریکی ریاستی فلوریڈا میں تباہی مچانا شروع کردی ہے، سڑکیں پانی میں ڈوبی ہوئی ہیں، اب تک تین افراد ہلاک ہوچکے ہیں، طوفان یہاں سے گلف کوسٹ کی طرف بڑھے گا۔طوفان ارما کئی ملکوں میں تباہی پھیلانے کے بعد فلوریڈا پہنچ چکا ہے۔ہواؤں کی رفتار ایک سو تیس میل فی گھنٹہ ہے، طوفان ابھی تک طوفان کیٹگری فور برقرار ہے۔ایک لاکھ 70 ہزار سے زائد گھروں اور کاروباری مراکز کی بجلی منقطع ہوچکی ہے۔میامی میں عمارت کی تعمیر کیلئے نصب کرین ٹوٹ گئی۔گورنر فلوریڈا کا کہنا ہے کہ طوفان سے بچنا ناممکن ہے۔طوفان سینٹ پیٹرزبرگ سے براہ راست ٹکرائے گا۔امریکی حکام کے مطابق 60 لاکھ افراد نے علاقہ چھوڑ دیا طوفان سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

کیریبئین جزائر کے بعد سمندری طوفان ارما نے امریکی ریاست فلوریڈا میں تباہی پھیلانی شروع کر دی۔ سمندری طوفان کے باعث تیز ہواؤں نے میامی کا رخ کر لیا۔ شہر کے نشیبی علاقوں میں سیلابی پانی آ گیا اور میامی انٹرنیشنل ائیرپورٹ بھی ڈوب گیا۔ طوفان کے باعث مچی افراتفری میں تین افراد ٹریفک حادثات جبکہ ایک پناہ کی تلاش میں مارا گیا۔ 130 میل فی گھنٹے کی رفتار سے چلنے والی طوفانی ہواؤں کے باعث لاکھوں افراد بجلی سے محروم ہو گئے۔ لوٹ مار کے خطرے کے پیش نظر میامی سمیت متعدد شہروں میں کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے۔ نیشنل ویدر سروس کے مطابق ارما امریکی تاریخ کے سات شدید ترین طوفانوں میں سے ایک ہے۔ اس سے پہلے ارما کے باعث کیریبئین جزائر میں 24 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ امریکی صدر نے وائٹ ہاؤس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ جلد آفت زدہ علاقے کا دورہ کریں گے۔