جھوٹی خبریں پھیلائی جا رہیں ہے،میں نے ڈی جی آئی ایس پی آر کو فون نہیں کیا تھا،احمد نوارانی کا حملے کے بعد پہلا انٹرویو

اسلام آباد (ویب ڈیسک) معروف صحافی احمد نوارانی نے اپنے اوپر ہونے والے حملے کے بعد پہلا انٹرویو دئتے ہوئے وضاحت کی ہے کہ ان کے بارے میں یہ خبر جھوٹی پھیلائی جا رہی ہے کہ انہوں نے ڈی جی آئی ایس پی آر کو فون کیا۔ انہوں نے تردید کرتے ہوئے کہا کہ ایسا کچھ بھی نہیں ہےاور میرے حوالے سے یہ کہنا کہ میں نے کسی پر شک کا اظہار نہیں کیا یہ تحقیقات کو متاثر کرنے کے لیے گمراہ کن پراپیگنڈا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق معروف صحافی احمد نوارانی نے اپنے اوپر ہونے والے حملے کے بعد پہلا انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ میں ان تمام احباب کا انہتائی شکر گزار ہوں جنہوں نے میرے پر ہونے والے حملے کے خلاف آقاز اٹھائی اور مجھ سے رابطہ کر کے اس کی مذمت کی ۔احمدا نورانی نے مزید کہا کہ میں اپنے خلاف ہونے والے جھوٹے پراپیگنڈا کی وضاحت بھی کرنا چاہوں گا کہ چند خبری اداروں نے یہ خبر جاری کی کہ میں نے ڈی جی آئی ایس پی آر سے خود رابطہ کیا اور ان سے کہا کہ میں نے کسی پر بھی شک کا اظہار نہیں کیا جب کہ یہ بات سراسر جھوٹ ہے میں نے ڈی جی آئی ایس پی آر سے رابطہ نہیں کیا بلکہ ڈی جی آئی ایس پی آر نے مجھ سے رابطہ کیا اور انہوں نے اس واقعے کی مذمت کرتے ہوئے اپنے تحفظات کا اظہار کیا جبکہ کچھ اداروں نے چاہا کہ وہ حقائق کو تور مروڑ کو پیش کر رہے ہیں کہ میں نے ان سے رابطہ کر کے کہا ہے کہ میں نے کسی پر شک کا اظہار نہیں کیا جو کہ غلط ہے کیونکہ میں اپنے پولیس کو تحریری بیان میں ایک مخصوص شخص کو نامزد بھی کیا ۔

اس طرح کا جھوٹا پراپیگنڈا کرنے والوں نے میری دل آزاری کی ہے اور یہ خبر تحقیقات کو متاثر کرنے کے لیے گمراہ کن پراپیگنڈا ہے ایسا نہیں ہونا چاہیے تھا۔