جب امیر بصرہ جمعرات کے دن چار سوبار درودپاکﷺ پڑھنا بھول گیا تو….

امیر بصرہ کا معمول تھا کہ وہ ہر رات ایک سو بار درودپاکﷺ پڑھتا لیکن جمعرات کے روز چار سو بار درود پاکﷺ پڑھنے کے بعد سویا کرتا تھا ۔ایک بار اس سے کوتاہی ہوگئی اور اسے یاد بھی نہ رہا کہ وہ گزشتہ جمعرات کو درود پاکﷺ کی مقررہ تعداد کا ذکر نہیں کرسکا۔اگلے دن اسے بصرہ کا ایک مفلوک الحال شخص ملنے آیا اور کہا کہ وہ امیر بصرہ سے تنہائی میں ملنا چاہتا ہے۔اس نے امیر بصرہ سے کہا’’ آپ پر چار سو دینار واجب ہیں‘‘
امیر بصرہ نے تعجبکہا’’ کس بات کے چار سو دینار،میں نے ایسا کیا کردیا ہے ‘‘
وہ شخص بولا’’ جس ہستی کا پیغامبر بن آکر آیا ہوں ،اس عظیم ہستی کا فرمان ہے آپ پر چارسو دینار واجب ہیں ‘‘

امیر بصرہ حیران ہوا تو اس شخص نے کہا ’’ اے امیر رات کو حضور پاک صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی زیارت ہوئی ۔آپﷺ نے حکم دیا کہ تم امیرِ بصرہ کے پاس جاؤ اور اسے ہمارا پیغام دو کہ تم ہر روز رات کو سو مرتبہ اورجمعرات کو چار سو مرتبہ درود کا نذرانہ بھیجتے ہو، لیکن پچھلی جمعرات کو تم نے درودشریف نہیں پڑھا، لہٰذا اس کے کفارہ کے طورپر چارسو دینار بطور کفارہ اس پیغام بر کو دے دو‘‘
امیر بصرہ خوشی سے لرز اٹھا،آنکھیں چھلک پڑیں۔یہ ایسا راز تھا جو اسکے علاوہ کوئی نہیں جانتا تھا کہ اس کا معمول کیا ہے۔وہ بے ساختہ پکارا’’ لبیک اللہ کے حبیبﷺ ۔شکر ہے خدایا کہ یہ عاصی سردارالانبیاﷺ کی نگاہ میں ہے‘‘ اس نے خوشخبری لانے والے اس شخص کی دست بوسی کی ۔ اس نے تشکر کے طور پر فوری طور پر ایک ہزار دینارغرباء میں تقسیم کرائے اور چارسو دینار اس شخص کو دیتے ہوئے کہا ’’ اے نیک انسان جب بھی کسی چیز کی ضرورت ہو تو بلاجھجھک میرے پاس چلے آیا کرنا‘‘

یہ شخص جسے اللہ کے حبیبﷺ نے امیر بصرہ کے پاس بھیجا تھا ،حضرت رابعہ بصریؒ کے والد گرامی تھے ۔اس وقت جب حضرت رابعہ بصری پیدا ہوئی تھیں ،ان کے گھر میں دیا جلانے کا انتظام بھی نہیں تھا۔وہ متقی اور انتہائی غیرت مند انسان تھے اور سوائے اپنے اللہ کے کسی کے سامنے ہاتھ نہیں پھیلاتے تھے۔عشق رسولﷺ انکی متاع حیات تھی۔حضرت رابعہ بصریؒ کی پیدائش کے بعد انہیں خواب میں اللہ کے پیارے رسولﷺ کی زیارت نصیب ہوئی اور سرکار دوعالم ﷺ نے فرمایا تھا ’’تمہاری نومولود بیٹی، خدا کی برگزیدہ بندی بنے گی اور مسلمانوں کو صحیح راہ پر لے کر آئے گی۔ تم امیرِ بصرہ کے پاس جاؤ اور اسے ہمارا پیغام دو کہ تم (امیرِ بصرہ) ہر روز رات کو 100 مرتبہ اورجمعرات کو 400 مرتبہ درود کا نذرانہ بھیجتے ہو، لیکن پچھلی جمعرات کو تم نے درودشریف نہ پڑھا، لہٰذا اس کے کفارہ کے طورپر 400 دینار بطور کفارہ یہ پیغام پہنچانے والے کو دے دو‘‘