پاکستان کا احسن اقدام ،بھارت کی نیندیں حرام کلبھوشن یا دیو کی اہلیہ رازوں سے پردہ اٹھا نے کا خوف مودی سرکار اور ’’را‘‘ نے سر جوڑ لئے

اسلام آباد(رپورٹ :اسد مرزا)پاکستان نے انسانی ہمدردی کے تحت بھارتی جاسوس کرنل کلبھوشن جادھوکے ساتھ اسکی اہلیہ کی ملاقات کی اجازت دیکر بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را ‘‘ کو مشکل میں ڈال دیاجس کے باعث بھارتی وزارت خارجہ کی جانب سے کسی قسم کا جواب موصول نہیں ہوا ۔

ذرائع کا کہناہے کہ کلبھوشن جادیو کی گرفتاری اور جاسوسی کے اعتراف کے بعد بھارت نے پاکستان کے الزامات کی سختی سے تردید کی تاہم کلبھوشن کی اہلیہ نے بھارتی میڈیا کے سامنے حقیقت کھول کر رکھ دی اور اعتراف کیا کہ اس کا شوہر نیوی کا حاضر سروس کرنل ہے اور’’ ر‘‘ا کے پاکستان میں جاسوس نیٹ ورک میں ملوث تھااور اس کے پاس بھی کئی راز ہیں ، لہذا بھارتی حکومت اسکی رہائی کے لئے اقدامات کرے ۔بتایا گیا کہ کلبھوشن کی اہلیہ کے بیان کے بعد ’’را ‘ نے خاتون کو غائب کر دیا اور دوبارہ اسکا نام منظر عام پر نہیں آیا اور نا ہی اس نے شوہر کی بازیابی کے لئے کوئی اپیل کی ۔

بتایا گیا ہے کہ حکومت پاکستان نے انسانی ہمدردی کے تحت کلبھوشن جادیو سے اس کی اہلیہ کی ملاقات کی اجازت دیکر بھارتی وزارت خارجہ کو آگا ہ کیا توانہوں نے جہاں چپ سادھ لی وہاں بھارتی حکومت اور ’’را‘‘ کے حکام سر جوڑ کر بیٹھ گئے ۔ذرائع کے مطابق اگر کلبھوشن کی اہلیہ کو ملاقات کے لئے پاکستان بھجوایا گیا تو اس کے ساتھ ’’را ‘‘ کی جانب سے ناروا سلوک اور اہم راز وں سے پردہ اٹھا دیا تو دنیا میں ایک بار پھر بھارت کی جگ ہنسائی اور تذلیل ہو گی،اس وجہ سے بھارت نے تا حال خاموشی اختیار کر رکھی ہے ۔