آج دنیا بھر میں ذیابیطس سے بچائو کا عالمی دن منایا جا رہا ہے

آج دنیا بھر میں ذیابیطس سے بچائو کا عالمی دن منایا جا رہا ہے۔ ذیابیطس دنیا میں تیزی سے عام ہوتا ہوا ایک ایسا مرض جسے خاموش قاتل کہا جاتا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق آنے والے کچھ سالوں میں پاکستان میں 25 فیصد افراد اس بیماری کا شکار ہوسکتے ہیں۔
ذیابیطس کا مرض پاکستان سمیت دنیا بھر میں خطرناک حد تک تیزی سے بڑھا رہا ہے۔ ذیابیطس کا شکار مریض کو خبر ہی نہیں ہوتی۔ مگر یہ مرض دیمک کی طرح انسان کو اندر ہی اندر سے کھا رہا ہوتا ہے۔ طبی ماہرین کے مطابق ذیابیطس 2 اقسام کی ہوتی ہیں۔ شوگر یا ذیابیطس کی بروقت تشخیص یا اعلاج نہ کیا جائے تو یہ مہلک ثابت ہوسکتا ہے۔
عالمی ادارہ صحت کی ایک رپورٹ کے مطابق پاکستان سمیت دنیا بھر میں ہر سال ذیابیطس کے مریضوں کی تعداد میں متواتر اضافہ ہو رہا ہے۔ ذیابیطس کی علامات میں پیاس کی شدت، جسمانی وزن میں کمی، غیر ضروری تھکاوٹ، پیشاب کا زیادہ آنا، آنکھوں میں دھندلا پن، زخم کا دیر سے بھرنا شامل ہیں۔ ایک تندرست طرز زندگی اپنا کر ہی اس بیماری سے بچا جاسکتا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت