دبئی میں خاتون نے اتفاقاً اپنی 13 سالہ بیٹی کا موبائل کھول کر دیکھا تو اندر ایسی چیز نظر آگئی کہ زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا لگ گیا، ایسا کیا تھا؟

دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) والدین اپنے بچوں کے تحفظ کے یوں تو ہمہ وقت متفکر رہتے ہیں مگر اب زمانہ کچھ ایسا آ گیا ہے کہ انہیں پہلے سے کہیں زیادہ خبردار رہنے کی ضرورت ہے۔انٹرنیٹ اور سوشل میڈیا کے اس دور میں خطرات ہر جانب منڈلا رہے ہیں اور والدین اپنے بچوں کی سوشل میڈیا سرگرمیوں سے غافل ہوں تو ان خطرات کا علم ہونا ممکن نہیں۔
متحدہ عرب امارات میں مقیم ایک بھارتی خاتون کے علم میں اتفاقاً آنے والا لرزہ خیز واقعہ ایک ایسی ہی مثال ہے۔یہ خاتون اپنی 13 سالہ بیٹی کا ای میل اکاﺅنٹ چیک کررہی تھیں کہ اس میں کچھ ایسا غیر اخلاقی مواد مل گیا کہ دیکھ کر ان کے رونگٹے کھڑے ہوگئے۔

گلف نیوز کے مطابق لڑکی کے ای میل اکاﺅنٹ میں متعدد فحش ویڈیوز موجود تھیں اور اسے کسی نامعلوم مرد کی جانب سے یہ ویڈیوز موصول ہونے کا سلسلہ کئی ماہ سے جاری تھا۔ خاتون کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے اپنی بیٹی سے اس فحش مواد کے بارے میں پوچھا تو ایک اور افسوسناک انکشاف سامنے آیا کہ ان کا جاننے والا ایک بھارتی نوجوان یہ ویڈیوز ان کی بیٹی کو بھیج رہا تھا۔ یہ 27 سالہ نوجوان اکثر ان کے گھر بھی آتا تھا اور لڑکی کو ہراساں کرتا تھا۔ لڑکی نے بتایا کہ نوجوان جب بھی ان کے گھر آتا تھا تو اسے جنسی طور پر ہراساں کرتا تھا اور اس کے جسم کو غیر مناسب انداز میں چھوتا تھا۔
یہ بھیانک انکشافات سامنے آنے کے بعد خاتون نے پولیس سے رابطہ کر لیا، جس پر پولیس نے 27 سالہ ملزم کو گرفتار کرلیا ہے۔ ملزم نے الزامات کی تردید کی ہے، تاہم ابتدائی تحقیق سے واضح ہوا ہے کہ لڑکی کو فحش مواد اسی نے بھیجا تھا اور وہ اسے جنسی طور پر ہراساں کرتا رہا ہے۔ یہ سلسلہ گزشتہ دو سال سے جاری تھا اور ملزم نے سنگین دھمکیوں سے کمسن لڑکی کو خاموش کروا رکھا تھا۔