مالک مکان ایک دن چپکے سے کرائے پر دئیے گئے اپنے گھر میں داخل ہوگیا تو وہاں کیا شرمناک ترین چیز مل گئی؟ دیکھتے ہی ہوش اُڑگئے، فوری پولیس کو بلا لیا کیونکہ۔۔۔

نیویارک(نیوز ڈیسک) بچوں کو جنسی ہوس کا نشانہ بنانے والے شیطان صفت مجرم اکثر اسی وجہ سے بے نقاب نہیں ہوپاتے کہ کمسن بچے ان کے خلاف کچھ بھی کہنے سے قاصر ہوتے ہیں۔ ایسی صورتحال میں یہ محض اتفاق ہی ہوتا ہے کہ کسی طرح ان درندوں کے لرزہ خیز جرائم دنیا کے سامنے آ جائیں۔ ایک ایسا ہی واقعہ امریکی ریاست ٹیکساس میں پیش آیا جہاں ایک مالک مکان اپنے کرایہ دارکی غیر موجودگی میں گھر کا جائزہ لے رہا تھا کہ اس کے کمپوٹر پر موجود ننھے بچوں کی درجنوں جنسی ویڈیوز برآمد ہو گئیں۔

ویب سائٹ ’ورلڈ وائرڈ ویئرڈ نیوز‘ کے مطابق مالک مکان نے بتایا کہ ڈیوڈ نامی شخص اس کے فلیٹ میں کرائے پر رہتا تھا۔ ایک دن جب وہ ڈیوڈ کی غیر موجودگی میں اپنے گھر کا معائنہ کررہا تھا تو تجسس کے باعث کمپیوٹر کا بھی جائزہ لینا شروع کردیا۔ تب ہی یہ بھیانک انکشاف سامنے آیا کہ اس کے کمپیوٹر پر بچوں سے زیادتی کی درجنوں ویڈیوز موجود تھیں۔
یہ ویڈیوز انٹرنیٹ سے ڈاﺅن لوڈ نہیں کی گئی تھیں بلکہ ڈیوڈ نے خود بنائی تھیں۔ ان ویڈیوز میں ایک شیر خوار بچے کو بھی دیکھا جاسکتا ہے جس کی عمر تقریباً ایک ماہ رہی ہوگی اور ڈیوڈ نے اسے بھی اپنی شیطانی حرکات کا نشانہ بنایا تھا۔ اسی بچے کی دو بہنوں، جن کی عمریں بالترتیب 5اور تین سال بتائی گئی ہیں، کو بھی وہ ہو س کا نشانہ بناتا رہا تھا۔

بعد ازاں پولیس کی تحقیقات میں معلوم ہوا کہ اس کی درندگی کا نشانہ بننے والے افراد میں ایک نوجوان لڑکی بھی شامل ہے جبکہ دیگر متعدد بچوں اور خواتین نے بھی بتایا کہ وہ انہیں جنسی زیادتی کا نشانہ بناچکا ہے۔ منٹگمری کاﺅنٹی پولیس نے 38 سالہ ملزم کو گرفتار کرنے کے بعد اس کے خلاف مقدمہ قائم کیا اور اب اسے عمر قید کی سزا سنادی گئی ہے۔