پی ٹی آئی رکن اسمبلی نے (ن) لیگ پر فاٹا کے تمام سینیٹرز کو خریدنے کا الزام عائد کردیا

تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی انجینیئر حامد الحق نے حکومت پر الزام عائد کیا ہے کہ (ن) لیگ نے فاٹا میں ووٹ خرید کر پیسے کی منڈی لگالی ہے، ایک سینیٹر منتخب ہونے لیے ہر ووٹر کو 32 کروڑ دیئے جا رہے ہیں۔
پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم این اے حامد الحق نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ ہلال الرحمان، ہدایت اللہ، مرزا آفریدی اور شمیم آفریدی فاٹا سے سینیٹرز منتخب ہونگے کیونکہ فاٹا کے چھ ارکان قومی اسمبلی نے گروپ بنا رکھا ہے، اس گروپ میں شاہ جی گل آفریدی ، جی جی جمال، بسم اللہ خان،ناصر آفریدی، بلال رحمان اور ساجد طوری شامل ہیں۔
حامد الحق نے الزام عائد کیا کہ فاٹا کے انتخابات کو حکومت نے پیسے کا استعمال کر کے خرید لیا ہے ، نون لیگ کی جانب سے ایک سینیٹر منتخب ہونے لیے ہر ووٹر کو 32 کروڑ دیئے جا رہے ہیں سارے معاملات کل شام پارلیمنٹ لاجز میں (ن) لیگ کی جانب سے لگائی گئی منڈی طے ہوچکے ہیں۔