،،قاتل کے دوستوں سے تفتیش : مدعی کا اعتراف جرم ،سالے کے قتل کی وجہ کیا بنی؟

لاہور(سپیشل رپورٹ)انویسٹی گیشن پولیس کینٹ ڈویژن نے اندھے قتل کی واردات میں ملوث مقدمہ کے مدعی کو ہی گرفتار کر کے آلہ قتل برآمد کر لیا ۔ایس پی کینٹ انویسٹی گیشن ڈاکٹر انوش مسعود چوہدری نے بتایا کہ مناواں میں نوجوان سلیمان کے اندھے قتل کی مختلف پہلوؤں پر تفتیش کا عمل جاری تھا لیکن مقتول کے بہنوئی سثاقب جو کہ مقدمہ کا مدعی بھی تھا کا کردار مشکوک تھا ۔انہوں نے مدعی کوبظاہر نظر انداز کر کے مختلف افراد کو شامل تفتیش کرتے اور مدعی کو سامنے بیٹھا کر خفیہ معلومات کی روشنی میں ایسے سوال کرتے کہ مدعی پریشان ہو جاتا اسی طریقہ سے ایسے شواہد حاصل کر کے مدعی مقدمہ کو باقاعدہ گرفتار کر کے تفتیش کی تو اس نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ملزم کے قبضہ سے آلہ قتل پسٹل برآمد کیا ۔ ملزم محمد ثاقب کے مطابق وہ شاہ عالم مارکیٹ کی دوکان میں کمپیوٹرکا کام کرتا ہے اور مجید پارک سوتر مل میں اپنی بیوی کے ساتھ رہائش پذیر تھا ۔2مرلہ مکان اس کی بیوی فریحہ اور اس کے بھائی سلمان کے نام تھا اس نے جائیداد ہتھیانے کی خاطراپنے سالے سلیمان بٹ کو رات سوتے ہوئے پسٹل سے فائر کر کے قتل کر دیا اور مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف درج کرادیا ۔