چیئرمین نیب کی صدر مملکت سے ملاقات، بدعنوانی کیخلاف کارروائیاں جاری رکھنے کی یقین دہانی

صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ نیب کے افسران انتہائی ایماندار اور غیر جانبدار ہونے چاہئیں کیونکہ بدعنوانی سے پاک انتظامیہ اور درست فیصلے ہی نیب کا طرہ امتیاز ہوسکتے ہیں۔ چیئرمین نیب نے صدر مملکت کو یقین دلایا کہ نیب بدعنوانی کے خلاف بلا امتیاز کارروائیاں جاری رکھے گا۔
ایوان صدر میں چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے صدر مملکت ممنون حسین سے ملاقات کی۔ اس موقع پر چیئرمین نیب نے صدر مملکت کو اپنے ادارے کی کارکردگی رپورٹ بھی پیش کی جسے سراہتے ہوئے صدر مملکت نے کہا کہ بدعنوانی کے خاتمے کی بنیاد ہر ایک کے ساتھ یکساں سلوک اور امتیاز سے پاک کارروائی ہے تاکہ قومی اداروں پر عوام کا اعتماد بحال ہوسکے۔
انہوں نے کہا کہ بدعنوانی کا خاتمہ اسی صورت میں ممکن ہے اگر انصاف کے تمام تقاضے پورے کیے جائیں۔
صدر مملکت ممنون حسین نے ہدایت کی کہ نیب کے بارے میں عدالتی اور عوامی حلقوں کے تحفظات دور ہونے چاہئیں۔ یہ حقیقت ہمیشہ پیش نظر رہے کہ بدعنوانی کے سدباب پر مامور ادارے اور ذمہ داران کے طرز عمل سے ملک میں جاری ترقیاتی عمل کسی صورت متاثر نہ ہو۔
انہوں نے کہا کہ بدعنوانی کا خاتمہ اور احتساب قومی ایجنڈے کی حیثیت رکھتا ہے اس لیے عوام کا اعتماد ایسے اداروں پر بحال رکھنے کیلئے تمام ممکنہ کوششیں کرنی چاہئیں۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ نیب میں بدعنوانی، اختیارات کے ناجائز اور بے جا استعمال سے اجتناب کیا جائے۔صدر مملکت ممنون حسین نے مزید کہا کہ بین الاقوامی سطح پر کرپشن سے متعلق اعشاریوں کے اعتبار سے پاکستان کی درجہ بندی مین خاطر خواہ بہتری آئی ہے جس میں نیب کا بھی کردار ہے۔