جاپان میں غیرملکی کارکنوں کے لیے نیا منصوبہ تیار، غیرملکی افراد کو کام کی اجازت ہوگی

ٹوکیو ۔ (ویب ڈیسک) جاپان کو افرادی قوت میں کمی کے باعث محنت کشوں کی شدیدقلت کا سامنا ہے۔ اس مسئلے سے نمٹنے کے لیے حکومت نے ایک منصوبہ بنایا ہے جس کے تحت بعض غیرملکی افراد کو ملک میں داخلے اور کام کی اجازت ہوگی۔ اِس وقت ملک میں غیرملکی کارکنوں کے لیے دو اقسام کے ویزے ہیں۔ ایک قسم 18 پیشہ ور زمروں میں سے کسی میں ملازمت کرنے والوں کے لیے ہے جن میں پروفیسر، ڈاکٹر اور وکیل شامل ہیں۔

ویزے کی دوسری قسم تکنیکی تربیت لینے والے افراد کے لیے ہے۔ مجوزہ نئے منصوبے کے تحت کچھ مخصوص اقسام کے ہنر کے حامل غیرملکیوں کو جاپان میں 5 سال کام کرنے کی اجازت دی جائے گی۔ تربیت مکمل کرنے والے افراد بھی اپنے اہل خانہ کو جاپان نہ لانے کی شرط پر اس قسم کا ویزا حاصل کرنے کے اہل ہوں گے۔ حکومت ایسے افراد کو ملازمت دینے والی کمپنیوں کو پابند کرے گی کہ وہ ان کے لیے رہائش حاصل کرنے میں تعاون کی منصوبہ بندی کریں۔ کمپنیوں کو اس ضمن میں اپنے منصوبے وزارت انصاف کو پیش کرنے ہوں گے۔