صوفی عمران، حاجی زرداری کو حکمران دیکھنا چاہتے ہیں تو اعتراض نہیں: عابد شیر علی

وزیر مملکت عابد شیر علی نے کہا ہے کہ عوام الیکشن میں صوفی عمران خان اور حاجی آصف زرداری کو حکمران دیکھنا چاہتے ہیں تو ہمیں کوئی اعتراض نہیں ہے۔ شرجیل میمن اور ڈاکٹر عاصم سمیت کوئی بھی دودھ کا دھلا نہیں ہے۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ میں بھی صادق اور امین نہیں ہوں۔
چوہدری عابد شیر علی نے ممبر سازی مہم کا افتتاح کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ صوفی امین عمران اور حاجی آصف علی زرداری جنتی ہیں۔ عمران ایک کتا نکالتے ہیں اور دوسرا پال لیتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ عزیر بلوچ کی جے آئی ٹی کو فارغ کردیا گیا۔ سندھ میں جائیں تو اچھا بھلا شخص بیمار ہوجاتا ہے۔ خیبرپختونخوا میں نابالغ حکومت ہے۔ نواز شریف کو دہشت گردی اور لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کرنے کی سزا ملی ہے۔
اگر عوام کو نواز شریف پسند نہیں تو ہمیں مسترد کردے۔ زرداری کی کرپشن کے کیس نیب کے پاس موجود ہیں۔ شرخیل میمن اور ڈاکٹر عاصم دودھ کے دھلے نہیں ہیں۔
عابد شیر علی نے نیب سے مطالبہ کیا کہ نیب میں موجود کیسز میں ان کی رقم واپس لائی جائے۔ کرپشن کے بے تاج بادشاہ خود اعتراف کرتے ہیں کہ آف شور کمپنیاں ہیں۔
الحاج شیخ رشید نے اثاثے ظاہر نہ کیے اور ملبہ چارٹرڈ اکاونٹنٹ پر ڈال دیا۔ انتخابات میں نواز شریف کو بھی مہم چلانے کی اجازت ہونی چاہئے۔ سبھی جماعتوں کو سیاست کرنے کا حق ہونا چاہیے۔
عوام اگر ڈاکو آصف علی زرداری یا صوفی عمران کو دیکھنا چاہتے ہیں تو ہمیں قبول ہے۔ لیکن ن لیگ کو بھی آزادی کے ساتھ الیکشن لڑنے کی اجازت دی جائے۔
انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے عدلیہ بحال کروائی اور آج بھی ہم عدلیہ کا احترام کرتے ہیں۔ 2018 کے انتخابات میں مسلم لیگ ن کو کامیابی حاصل ہوگی