حامد میر نے 4 سال بعد سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات کرنے والے جسٹس باقر نجفی سے متعلق ایسا انکشاف کر دیا کہ ہر پاکستانی کا منہ کھلے کا کھلا رہ گیا، جان کر طاہر القادری پھر واپس آنے کی تیاری پکڑ لیں گے

لاہور ( آن لائن) سینئر صحافی و اینکر پرسن حامد میر نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات کرنے والے جسٹس باقر نجفی سے متعلق ایسا انکشاف کر دیا ہے کہ ہر پاکستانی کا منہ کھلے کا کھلا رہ جائے گا۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے حامد میر نے کہا کہ ” لاہور شہر میں یہ کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں کہ جسٹس باقر نجفی کیساتھ کیا ہوا، جسٹس باقر نجفی کو دھمکایا جاتا تھا کہ آپ اپنی رپورٹ میں خیال کریں، اس رپورٹ کو دبایا گیا۔ جسٹس باقر نجفی اس معاملے پر بول نہیں سکتے اور وہ اب تک بولے نہیں، لیکن وہ بہت مشکل دور سے گزرے ہیں۔“

حامد میر نے اپنی گفتگو میں جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ کے معاملے کو بھی سوچا سمجھا منصوبہ قرار دیا اور کہا کہ وہ یہ نہیں کہتے کہ یہ کس نے کروایا لیکن صاف نظر آ رہا ہے کہ یہ صرف جسٹس اعجاز الاحسن کیلئے نہیں بلکہ سپریم کورٹ کے تمام ججز، ہائیکورٹ کے ججز اور نیب کورٹ کے جج بشیر صاحب کیلئے پیغام ہے۔