سابق وزیراعظم بھری عدالت میں شرمسار۔۔ احتساب عدالت میں سیکورٹی پر مامور عملے کو حکم دینے پر کرارا جواب مل گیا

اسلام آباد(ویب‌ڈیسک) احتساب عدالت اسلام آباد سکیورٹی پر مامور عملے نے میاں نواز شریف کی بات ماننے سے انکار کر دیا۔ طویل ترین لوڈشیڈنگ کی وجہ سے کمرہ عدالت میں حبس تھا جس کی وجہ سے میاں نواز شریف گرمی برداشت نہ کر سکے اور انہوں نے سکیورٹی پر مامور عملے کے ایک شخص کو اپنے پاس بلایا اور اسے کھڑکیاں کھولنے اور پردے ہٹانے کا کہا کہ تازہ ہوا اندر آئے جس پر اس شخص نے کہا کہ’’ سوری سر ‘‘ میں ایسا کرنے کا مجاز نہیں ۔

گرمی کی بدولت میاں نوازشریف اپنی نشست پر پہلو بدلتے رہے اور بے چین نظر آئے ۔ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کے ترجمان ڈاکٹر مصدق ملک کے کمرہ عدالت میں آنے کے بعد سابق وزیر اعظم نے انہیں نوٹ شدہ کاغذات دیئے اور ضروری ہدایات بھی دیں جنہیں انہوں نے اپنی جیب میں ڈال دیا ۔ ۔