میں عمران خان اور ان کی اہلیہ سے معافی مانگتا ہوں

اسلام آباد (ویب‌ڈیسک) : نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے معروف صحافی مجیب الرحمان شامی نے پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کی تیسری اہلیہ سے متعلق دیا گیا بیان واپس لے لیا۔ مجیب الرحمان شامی نے اپنے پروگرام میں کہا کہ اگرچہ میں نے محترمہ بشریٰ بی بی سے متعلق کوئی غیر مناسب بات نہیں کی تھی لیکن مجھےیوسف بیگ مرزا اور فواد چوہدری نے فون کر کے کہا کہ آپ کو ایسا نہیں کہنا چاہئیے تھا۔

انہوں نےمجھ سے کہا کہ آپ نے غلط انداز میں بات کی ہے اور یہ غیر مناسب بات ہے ، تو میں نےان سے کہا کہ میرا مقصد کسی کی توہین یا دل آزاری نہیں تھا جس پر وہ مطمئن ہوگئے لیکن صبح پھر میرے بیان پر کچھ لوگوں نے طوفان اٹھا دیا ، تو بات یہ ہے کہ ذکر ہوا تھا کہ محترمہ بشریٰ بی بی کا ، ہماری جانب سے ان کی توہین نہیں کی گئی ۔اس سب کے باوجوداگر پی ٹی آئی کے ذمہ دار سمجھتے ہیں کہ ہم نے کوئی غیر مناسب بات کی ہے ،تو میں ان سے معذرت خواہ ہوں،ہم اس بات کو واپس لیتے ہیں اور آئندہ احتیاط کریں گے، لیکن پی ٹی آئی کی اعلیٰ قیادت کو چاہئیے کہ اپنے سینئیر رہنماؤں کو بھی سمجھائیں کہ جو گفتگو وہ کرتے ہیں، گالیاں دیتے ، وہ انہیں زیب نہیں دیتا ، ان کو بھی بتائیں کہ اخلاقیات کیا ہوتی ہیں، بات کرنے کا سلیقہ ہونا چاہئیے، اختلاف کا بھی طریقہ تنقید کا بھی طریقہ ہونا چاہئیے۔

یاد رہے کہ دو روز قبل سینئر صحافی اور تجزیہ کار مجیب الرحمان شامی نے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ عمران خان کی اہلیہ نواز شریف کی مشکلات کی ذمہ دارہیں۔ مجیب الرحمان شامی کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کے سربراہ کی اہلیہ بشریٰ بی بی ایک پیرنی ہیں بشریٰ بی بی وظیفے اور عمل کرنے کیلئے شہرت رکھتی ہیں۔ مجیب الرحمان شامی کا مزید کہنا تھا کہ بظاہر لگتا ہے کہ بشریٰ بی بی کے عمل اور وضیفوں سے ن لیگ کے قائد سے غلطیاں سرزد ہو رہی ہیں۔ جب سے بشریٰ بی بی عمران خان کی اہلیہ بنی ہیں، تب سے نواز شریف غلطیوں پر غلطیاں کر رہے ہیں۔