احتساب بلاتفریق ہونا چاہیے :شہباز شریف

وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ نیب ہو یا کوئی اور ادارہ وہاں انصاف یا احتساب بلاتفریق ہونا چاہیے۔ قانون کی حکمرانی کو ہر کسی کو تسلیم کرنا چاہیے۔
وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کا میو اسپتال کے سرجیکل ٹاور کے افتتاح کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا کہ مجھ پر الزام لگا کہ میں نے پاناما میں نیازی صاحب کو 10 ارب روپے رشوت دی۔ نیازی صاحب، الیکشن میں جانا ہے اور آپ کہتے ہیں کہ میں نے ایک پاکستان بنانا ہے۔
انہوں نے کہا کہ یہاں پر اسٹیٹ آف دی آرٹ 16 آپریشن تھیٹرز ہیں۔ ٹاور میں برن یونٹ بھی اسٹیٹ آف دی آرٹ ہے۔ برن یونٹ میں جدید مشین ہے جویہ پتہ لگا لیتی ہے کہ مریض کتنے فیصد جلا ہوا ہے۔ انیجیو گرافی مشین بھی اسٹیٹ آف دی آرٹ ہے، ایسی مشین شاید پاکستان میں اور کہیں نہیں ہے۔شہباز شریف نے کہا کہ خوشی ہے تھیٹرز میں انفیکشن کے پھیلاؤ کا زیرو فیصد چانس ہے اور اسپتال میں لانڈری بھی اسٹیٹ آف دی آرٹ ہے۔ پاکستان میں اس سے بہتر اسپتال کوئی اور نہیں ہے۔ کاش سندھ میں بھی اچھے اسپتال ہوتے تو الیکشن میں ایک صحت مند مقابلہ ہوتا۔ سندھ میں تو انہوں نے بیڑہ غرق کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ جب سیلاب آیا تو سوات میں بھی ہم نے ایک ٹرسٹ اسپتال بنا کردیا۔ مجھے ابھی 12، 13 اسپتالوں کے افتتاح کرنے ہیں۔
شہباز شریف نے مزید کہا کہ ہم نے اورنج لائن میں 70ارب روپے سے زائد بچت کی ہے۔ بچت پر نیب کو تو ہمیں سرٹیفکیٹ دینا چاہیے۔