’اگر کوئی زبردستی شادی کروانے کی کوشش کرے تو اپنے انڈرویئر میں چمچ چھپالینا کیونکہ۔۔۔‘ نوجوان لڑکیوں کو انوکھا مشورہ دے دیا گیا

لندن (نیوز ڈیسک)زبردستی کی شادی مشرق کے بعد اب مغرب کا بھی مسئلہ بن چکا ہے۔ وہ یوں کہ مغربی ممالک میں بسنے والے مشرقی ممالک کے باشندے اپنی لڑکیوں کو اپنے آبائی ممالک لا کر زبردستی ان کی شادیاں کروا دیتے ہیں۔ حکومتوں کو تو اس مسئلے کا کوئی حل نہیں سوجھ رہا البتہ ایک برطانوی این جی او نے لڑکیوں کو زبردستی کی شادی سے بچانے کے لئے دلچسپ و عجیب مشورہ دے دیا ہے کہ جب ان کے والدین انہیں واپس اپنے ملک لے جا رہے ہوں تو وہ وہ اپنے انڈرویئر میں دھات کا چمچ چھپا لیں۔

یورو نیوز کے مطابق یہ نرالا مشورہ برطانوی انسانی حقوق تنظیم ’کارما نروانا‘ کی جانب سے سامنے آیا ہے جس کا کہنا ہے کہ اگر آپ کے انڈرویئر میں دھات کا چمچ چھپا ہوا ہو تو میٹل ڈیٹیکٹر سے گزرتے ہوئے اس کا الارم آن ہوجائے گا جس کی وجہ سے یقیناًآپ کو مزید تلاشی کیلئے علیحدٰہ لیجایا جائے گا او راس دوران آپ سکیورٹی اہلکاروں کو بتا سکتی ہیں کہ آپ کو زبردستی ملک سے باہر لے جایا جا رہا ہے۔

تنظیم کی ترجمان نتاشا رتو کا کہنا ہے کہ وہ اس تکنیک سے پہلے ہی کئی لڑکیوں کی مدد کرچکی ہیں۔ نتاشا نے بتایا کہ برطانیہ میں سکول کی چھٹیوں کا آغاز ہورہا ہے اور عموماً اس سیزن میں غیر ملکی باشندے اپنی بچیوں کو چھٹیوں کے بہانے ساتھ لے کر اپنے آبائی ممالک جاتے ہیں اور وہاں ان کی زبردستی شادیاں کروادی جاتی ہیں۔ انہوں نے یورو نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ عموماً نوعمر لڑکیوں کو اندازہ ہوتا ہے کہ انہیں زبردستی شادی کیلئے لیجایا جارہا ہے لیکن وہ اپنے ساتھ موجود اہلخانہ کے خوف کی وجہ سے کسی سے بات نہیں کرسکتیں۔ اگر ان کے لبا س میں دھات کا چمچ موجود ہو تو میٹل ڈیٹیکٹر آن ہو جائے گا اور اس صورت میں یقیناًانہیں سکیورٹی چیک کیلئے علیحدہ لیجایا جاتا ہے اور اس دوران وہ اپنے خدشات کے بارے میں سکیورٹی اہلکاروں کو بتاکر متوقع خطرناک صورتحال سے بچ سکتی ہیں۔