امریکا کا افغان پالیسی تبدیل کرنے کا عندیہ

ایک سال بعد پاکستان کا موقف درست ثابت ہوا امریکا نے اپنی نامناسب جانبدار پالیسی کو تبدیل کرنے کا عندیہ دےدیا اس سلسلے میں ایک جائزہ کمیٹی بھی تشکیل دے دی گئی ہے۔
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے افغانستان کےلئے ایک متنازعہ پالیسی تشکیل دی تھی جس پر پاکستان نے کھل کر اپنے تحفظات کا اظہار کیا تھا تاہم امریکی حکام اپنی ہٹ دھرمی پر قائم رہے لیکن انکو اب احساس ہوا ہے کہ امریکی پالیسی ناکامی کا شکار ہورہی ہے۔
غیرملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ امریکا اپنی افغان حکمت عملی کا جائزہ لینے کی تیاری کررہا ہے جس میں پاکستان کے ساتھ امریکی تعلقات کا جائزہ بھی شامل ہوگا۔
غیرملکی میڈیا کے مطابق افغان پالیسی کا وسیع ترجائزہ اگلے چند ماہ میں شروع کیاجاسکتاہے۔امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ افغانستان میں پیش رفت میں کمی پرکئی مرتبہ مایوسی کا اظہار کرچکےہیں۔
غیر ملکی میڈیا کے مطابق مجوزہ جائزے میں موجودہ حکمت عملی کےتمام پہلوؤں کا جائزہ لیاجائےگا۔