جس قوم نے تین مرتبہ وزیراعظم بنایا اس کا قرض اتارنے جارہا ہوں: نواز شریف

گرفتاری کے امکان کے باوجود سابق وزیراعظم اور پاکستان مسلم لیگ نواز کے قائد نواز شریف نے جمعے کو وطن واپسی کے موقع پر لاہور ایئرپورٹ پر عوام سے خطاب کا اعلان کردیا۔
لندن میں پاکستانی کمیونٹی سے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ اس مشکل وقت پر اپنی قوم کو تنہا نہیں چھوڑ سکتا۔
نواز شریف نے کہا ہے کہ اب جیل جانا پڑے یا پھانسی پر چڑھایا جائے لیکن اب ان کے قدم نہیں رکیں گے۔
انہوں نے کہا کہ جیل کی کوٹھری اپنے سامنے دیکھ کر بھی پاکستان واپس جارہا ہوں، ووٹ کو عزت دو کا وعدہ پورا کرنے جارہا ہوں۔
انہوں نے کہا کہ کیا پاکستان کی تاریخ میں کوئی شخص 11 سال قید بامشقت کی سزا سننے کے بعد پاکستان واپس آیا ہے؟ مجھے جس قوم نے تین مرتبہ وزیراعظم بنایا اس کا قرض اتارنے جارہا ہوں۔
اپنے خلاف احتساب عدالت کے فیصلے پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دنیا کے کئی ممالک کو کنگالنے کے باوجود فیصلے میں لکھنا پڑا کہ میرے خلاف کرپشن کا کوئی ثبوت نہیں ملا، فیصلے میں لکھا گیا کہ نواز شریف کو کرپشن کے الزامات سے بری کیا جاتا ہے۔
نواز شریف نے کہا کہ میرے دل میں پاک فوج کے غازیوں اور شہیدوں کا بڑا احترام ہے، شہیدوں نے ہمارے کل کے لیے اپنا آج قربان کیا، ہمیں ان سے بے پناہ محبت ہے، ہم ان فرزندان قوم کے لیے اپنا سب کچھ قربان کرسکتے ہیں۔