’’عمران نے مجھے بتایا کہ اس دن جمائما نے یہ کام کیا تو اس کا بازو توڑ دیا اور۔۔۔‘‘ ریحام خان نے ایسی بات کہہ دی کہ ہر کوئی حیران پریشان رہ گیا

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)ریحام خان کی کتاب کا سبھی کو انتظار تھا جو اب ختم ہو ا اور کتاب منظرعام پر آ گئی ہے، جس میں انہوں نے انتہائی چشم کشا انکشافات کیے ہیں۔ اس کتاب میں انہوں نے عمران خان کے جمائما خان کا بازو توڑنے کا ایک ایسا واقعہ بیان کیا ہے کہ پڑھ کر ہر کوئی حیران پریشان رہ جائے۔ وہ لکھتی ہیں کہ ’’عمران خان نے مجھے ایک بار بتایا کہ شادی کے کچھ عرصہ بعد جمائما خان بہت زیادہ بدتمیز اور غصیلی ہو گئی تھی ۔ وہ ہمہ وقت مجھ پر چیختی چلاتی رہتی، حتیٰ کہ غصے کے وقت اس کے ہاتھ میں جو کچھ ہوتا وہ مجھے دے مارتی تھی۔ایک بار وہ ایسے ہی بہت زیادہ بدتمیزی کر رہی تھی اور مجھے مارنے کے لیے آگے بڑھی تو میں نے بھی اس پر ہاتھ اٹھا دیا، جس سے اس کا بازو ٹوٹ گیا۔‘‘ ریحام خان لکھتی ہیں کہ یہ بات کہہ کر عمران خان نے ایک قہقہہ لگایا جیسے وہ کوئی بہت مزاحیہ واقعہ سنا رہے ہوں۔ دوسری طرف مجھے یہ سن کر شدید جھٹکا لگا اور میں نے اس پر عمران خان سے بہت بحث کی اور اسے کہا کہ یہ تو گھریلو تشدد اور استحصال کے زمرے میں آتا ہے۔ آپ اس کا کوئی جواز نہیں تراش سکتے۔

ریحام خان لکھتی ہیں کہ’’عمران خان نے اس حوالے سے مزید بتایا کہ جمائما لندن کی پارٹیوں کو بہت ’مِس‘ کرتی تھی۔ وہ یہاں کے موسم سے شدید نفرت کرتی تھی، اسے اس گھر سے بھی نفرت تھی۔ یہاں آنے کے بعد پہلے دو سال بہت مشکل میں گزرے۔ جب ہم اسلام آباد میں ای 7 والے گھر میں پہلی بار آئے تو ابتداء میں وہ بہت خوش تھی لیکن اس کی یہ خوشی زیادہ دیر برقرار نہیں رہی اور اس کا رویہ بہت سردمہرانہ اور جارحانہ ہو گیا۔ وہ بات بے بات غصہ کرنے لگی اور مجھ پر چیزیں پھینکنے لگی تھی۔ ایک بار اس نے مجھے اپنی ٹانگ اڑا کر گرانے کی کوشش کی۔ ایک اور موقع پر اس نے غصے میں مجھے فون دے مارا۔ ایک بار وہ مجھے مسلسل گالیاں دیئے جا رہی تھی اور چپ ہی نہیں کر رہی تھی جس پر میں نے اس کے منہ پر تھپڑ جڑ دیئے۔ اس پر اس نے روتے ہوئے اپنے بھائی کو فون کیا لیکن اس کے بھائی نے الٹا اسے ہی مجھ سے معافی مانگنے کو کہہ دیا۔ میں ان دنوں اس کی بدتمیزی سے اس قدر تنگ آ چکا تھا کہ اسے طلاق دینا چاہتا تھا لیکن اس کی والدہ اینابیل نے مجھے سمجھایا اور طلاق دینے سے روک دیا۔اس کے روئیے میں یہ تبدیلی خاص طور پر تب آئی تھی جب اسے وراثت سے حصہ ملا اور وہ کافی دولت کی مالک بن گئی۔ اس کے بعد وہ بہت متکبر ہو گئی تھی۔‘‘ واضح رہے کہ ریحام خان نے اپنی یہ کتاب کسی پبلشر سے نہیں چھپوائی بلکہ اسے ایمازون کے ٹیبلٹ کنڈل پر جاری کر دیا ہے۔ اس کی قیمت 9.99ڈالر رکھی گئی ہے اور اسے صرف آن لائن پڑھا جا سکتا ہے۔ اس کتاب کا نام بھی انہوں نے ’’ریحام خان‘‘ ہی رکھا ہے۔