دبئی ائیرپورٹ پر خاتون کی آمد، امیگریشن آفیسر نے پاسپورٹ دیکھا تو اپنی سیٹ سے اچھل پڑا کیونکہ۔۔۔

دبئی سٹی(مانیٹرنگ ڈیسک) سکیورٹی خطرات کے باعث آج کل ائیرپورٹوں پر مسافروں کی چیکنگ میں جتنی احتیاط سے کام لیا جاتا ہے اس کے پیش نظر یہ بات ناممکن نظر آتی ہے کہ کوئی شخص جعلی دستاویزات پر سفر کر سکے، مگر ایک اماراتی لڑکی نے تو کمال ہی کر ڈالا۔ یہ لڑکی اپنی خالہ کا پاسپورٹ چُرا کر امارات سے ترکی جا پہنچی، اور پھر وہاں سے واپس بھی اسی پاسپورٹ پر آئی، یہ الگ بات کہ واپسی پر دبئی ائرپورٹ پر پکڑی گئی۔

گلف نیوز کے مطابق 23 سالہ لڑکی دو ہفتے قبل اپنی خالہ کا پاسپورٹ استعمال کرتے ہوئے دبئی انٹرنیشنل ائیرپورٹ سے ترکی کے لئے روانہ ہوئی۔ وہ ائیرپورٹ پاسپورٹ کنٹرول شعبے کو دھوکہ دینے میں کامیاب رہی، بآسانی ترکی میں اتری، وہاں دو ہفتے قیام کیا، اور پھر اسی پاسپورٹ کو استعمال کرتے ہوئے دبئی کے لئے واپس روانہ ہوئی۔

اُدھر خالہ نے اپنا پاسپورٹ غائب پایا تو پولیس کو اطلاع کر دی۔ جب معاملے کی تفتیش ہوئی تو پتا چلا کہ اس کا پاسپورٹ ترکی جانے والے کسی مسافر نے استعمال کیا تھا۔ خالہ کا کہنا تھا کہ اس کی بھانجی دو ہفتے قبل یہ کہہ کر گئی تھی وہ اپنی سہیلیوں کے ساتھ سیر و تفریح کے لئے جا رہی ہے لیکن اس انہیں معلوم نہیں تھا کہ وہ ان کا پاسپورٹ چوری کر کے ملک سے باہر جا رہی ہے۔

دبئی ائیرپورٹ پر یہ لڑکی واپس پہنچی تو امیگریشن آفیسر اس کا پاسپورٹ دیکھ کر حیرت سے اچھل پڑا۔ یہ تو وہی پاسپورٹ تھا جس کے چوری ہونے کی رپورٹ درج ہو چکی تھی اور ائیرپورٹ حکام کو بھی اس کے متعلق خبردار کیا جا چکا تھا۔ سکیورٹی حکام نے فوری طور پر لڑکی کو حراست میں لے لیا اور بعد ازاں اسے پبلک پراسیکیوشن ڈیپارٹمنٹ کے حوالے کر دیا گیا۔ عدالت میں اس کے خلاف مقدمے کی سماعت جاری ہے، جس کا فیصلہ 12 اگست کے روز متوقع ہے۔