خادم حسین رضوی کا آفیشل ٹوئٹر ہینڈل بلاک کردیا گیا

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر نے تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم رضوی کا آفیشل ٹوئٹر ہینڈل بلاک کر دیا۔
سماجی ویب سائٹ انتظامیہ کے مطابق خادم رضوی کا ٹوئٹر ہینڈل قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کے باعث بند کیا گیا۔
قبل ازیں ٹوئیٹر نے علامہ خادم رضوی کا اکاؤنٹ بند کرنے کی پاکستان کی درخواست مسترد کر دی تھی۔
وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ حکومت کو اصل چیلنج سوشل میڈیا سے درپیش ہے جہاں ہزاروں اکاؤنٹس سے جعلی خبریں بھی پھیلائی جا رہی ہیں۔
ان کا کہنا تھا پاکستان نے ٹوئٹر انتظامیہ سے خادم رضوی کا ٹوئٹر ہینڈل بند کرنے کی درخواست کی تھی جسے انہوں نے مسترد کردیا۔دوسری جانب تحریک لبیک پاکستان نے پارٹی قائد کا ٹوئٹر اکاؤنٹ بلاک کرنے کی شدید مذمت کی ہے اور ٹوئٹر انتظامیہ سے اکاؤنٹ واپس بحال کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔
یاد رہے کہ علامہ خادم رضوی تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ ہیں اور ٹی ایل پی نے آسیہ بی بی کی سپریم کورٹ سے بریت کے فیصلے کے خلاف لاہور سمیت ملک کے مختلف شہروں میں احتجاجی دھرنے دیئے تھے۔
علامہ خادم رضوی نے لاہور میں ہونے والے دھرنے کی قیادت کی تھی اور حکومت سے مذاکرات کامیاب ہونے اور معاہدے کے بعد دھرنا ختم کیا تھا۔