Home » ایک اوور میں 43 رنز، کرکٹ کی دنیا میں نیا ہوش ربا ریکارڈ

تازہ ترین

Advertisment

مقبول خبریں

کھیل

ایک اوور میں 43 رنز، کرکٹ کی دنیا میں نیا ہوش ربا ریکارڈ

آج کل کرکٹ میں ہر کوئی کھلاڑیوں اور میچوں کے رن ریٹ کی بات کرتا ہے لیکن جو کچھ نیوزی لینڈ میں ہوا، وہ ناقابل یقین تھا۔ یہ ایک نیا عالمی ریکارڈ تھا، جس میں لسٹ اے کے ایک میچ میں ایک اوور میں تینتالیس رنز بنائے گئے۔

کرکٹ کی دنیا میں یہ نیا ہوش ربا ریکارڈ بدھ سات نومبر کے روز بنا اور فورڈ ٹرافی کے لسٹ اے کے اس میچ میں، جو نیوزی لینڈ کے شہر ہیملٹن میں کھیلا جا رہا تھا، ناردرن ڈسٹرکٹس کی ٹیم کے بلے بازوں جو کارٹر اور بریٹ ہیمپٹن نے سینٹرل ڈسٹرکٹس کے خلاف کھیلتے ہوئےوِلم لُڈِک کے ایک اوور میں 43 رنز بنائے۔

اس سے پہلے دنیا بھر میں کسی بھی فرسٹ کلاس کرکٹ میچ میں ایک اوور میں زیادہ سے زیادہ رنز بنانے کا عالمی ریکارڈ بنگلہ دیشی کرکٹر علاؤالدین بابو نے 2013ء میں بنایا تھا، جب انہوں نے ڈھاکا پریمیئر لیگ کے ایک مقابلے میں ایک اوور میں 39 رنز بنائے تھے۔ تب بولنگ زمبابوے کی قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان ایلٹن چیگُم بُورا کر رہے تھے۔

ہیملٹن میں سات نومبر کے روز جو نیا عالمی ریکارڈ بنا، اس میں چھ گیندوں کا اوور دراصل آٹھ گیندوں کا ہو گیا تھا، جس کی وجہ دو نو بالز تھے۔ دلچسپ بات یہ بھی ہے کہ کرکٹ ماہرین کو حیران کر دینے والی یہ بیٹنگ جن دو کھلاڑیوں نے کی، ان میں سے ایک، جو کارٹر تو اپنا صرف پانچواں لسٹ اے میچ کھیل رہے تھے۔

اس اوور میں بریٹ ہیمپٹن نے پہلی گیند پر ایک چوکا لگایا، جس کے بعد اگلی دونوں گیندیں نو بالز تھیں۔ ان پر ہیمپٹن نے مسلسل دو چھکے لگا دیے۔ اس سے اگلی گیند پر بھی انہوں نے ایک چھکا لگایا اور پھر ایک سنگل لے کر وہ پچ کے دوسرے سرے پر پہنچے تو بیٹنگ اینڈ پر بولر کے سامنے جو کارٹر تھے۔ تب تک اس اوور میں تسلیم شدہ طور پر صرف تین گیندیں ہی کی گئی تھیں اور 25 رنز بن چکے تھے۔ اگلی تین گیندوں پر جو کارٹر نے تین مسلسل چھکے لگا دیے اور اپنے ساتھ ساتھ بریٹ ہیمپٹن کو بھی کرکٹ ریکارڈز کی کتابوں میں لے گئے۔

جب وِلم لُڈِک نے اپنا اوور پورا کیا، تو اسکور بورڈ پر شائقین کو اعداد کی یہ ترتیب نظر آئی: 4,6nb,6nb,6,1,6,6,6۔ یہی نہیں بولر لُڈِک جن کا تب تک اس میچ میں بولنگ ریکارڈ نو اوورز میں ایک وکٹ کے بدلے 42 رنز تھا، اپنے اس اوور کے اختتام پر 10 اوورز میں ایک وکٹ لے کر 85 رنز دینے والے بولر بن چکے تھے۔

یوں انہوں نے اپنے پہلے نو اوورز میں کُل 42 رنز دیے جبکہ دسویں اوور میں 43 رنز۔ کرکٹ کے تجزیہ نگاروں کے مطابق ایسے کسی تاریخی اوور کے بعد یہ ناممکن نہیں کہ بولر کو رات کو نیند میں بھی اپنی گیندیں اڑ کر باؤنڈری کے پار جاتی ہوئی نظر آئیں۔