صدر مالخانے میں پولیس ڈکیتی،ناکام،،ڈی ایس پی بال بال بچ گیا،4پولیس اہلکاروں سمیت 5گرفتار

لاہور(رپورٹ:اسد مرزا)لاہور پولیس کے صدر مالخانہ میں پولیس ڈکیتی کی بڑی واردات ہوئی لوئر مال پولیس نے 4 اہلکاروں سمیت 5افراد کو گرفتار کر لیا 10موٹر سائیکلیں برآمد کر لی ہیں جن کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے ۔لاہو ر پولیس کے ڈاکوں کا یہ گروہ سابق ڈی ایس پی لیگل انوسٹی گیشن ناصر پنجوتہ کی سربراہی میں طویل عرصہ سے کام کر رہا تھاجو اب تک سیکڑوں گاڑیاں، موٹر سائیکلیں کباڑیوں کو فروخت کرکے کڑوروں روپے کما چکے ہیں ۔پولیس کے اعلی حکام نے گرفتار اہلکاروں کے ڈی ایس پی لیگل بارے انکشاف کے باوجود انکا نام مقدمے سے گول کر دیا ۔ بتایا گیاہے کہ لوئر مال پولیس نے ایک مشکوک ٹرک کو موٹر سائیکلیں لیجانے پر روکا تو اس میں سے ایک شخص بھاگ گیا جبکہ باقی افراد کو گرفتار کیا تو علم ہوا کہ ملزمان میں صدر مالخانہ کا یوسف ہیڈ کانسٹیبل شوکت کانسٹیبل ،صدر مالخانے وئیر ہاؤس کا انچارج ہیڈ کانسٹیبل انوار الحق ،کانسٹیبل صدیق ،اور کباڑیہ ملک عاصم خورشید ہے اعلی حکام نے ان ملزمان کی تفتیش سی آئی اے سے کروائی جہاں ملزمان نے انکشاف کیا کہ وہ ڈی ایس پی لیگل انوسٹی گیشن ناصر پنجوتہ کی سرپرستی میں یہ تمام وارداتیں کر تے ہیں ۔انہوں نے لاہور پولیس کی جانب سے مالخانے میں جمع کرائی گئی موٹر سائیکلیں ،کاریں اور دیگر سامان بلال گنج کباڑخانہ میں فروخت کرکے رقم تقسیم کر لیتے ہیں۔پولیس اہلکاروں نے انکشاف کیا کہ وہ طویل عرصہ سے یہ کام کر ہے ہیں لیکن اب معمولی سی غلطی کے باعث پھنس گئے ۔لوئر مال پولیس کے مطابق ملزمان کی سفارش ڈی ایس پی لیگل ناصر پنجوتہ بھی کرتا رہا لیکن انکے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے