ناک میں انگلی ڈالنے سے سنگین بیماریاں جنم لیتی ہیں

بعض لوگوں کو ناک میں انگلی ڈالنے کی عادت ہوتی ہے جو دیکھنے میں تو کراہت آمیز ہوتی ہی ہے، اب ڈاکٹروں نے اس کے طبی نقصانات بھی بتا دیئے ہیں۔
دی مرر کے مطابق ڈاکٹر ایرک ویوگ کا کہنا ہے کہ”ناک میں انگلی ڈالنے سے ہاتھوں پر موجود بیکٹیریا ناک میں چلے جاتے ہیں۔ ان میں سے بعض بہت خطرناک ہوتے ہیں جو سنگین بیماریوں کا سبب بن سکتے ہیں۔
اس کی ایک مثال سٹیفائلوکوکس اوریوس (Staphylococcus aureus) ہے، جو انگلی کی رگڑ لگنے کے باعث ناک میں زخم ہونے اور خون آنے کا سبب بنتا ہے۔ “
ڈاکٹر ایرک کا مزید کہنا تھا کہ ”ناک میں ہونے والے اس زخم میں دیگر بیکٹیریا جمع ہو کر اس زخم کو بگاڑ سکتے ہیں۔
اس میں پیپ وغیرہ پیدا کر سکتے ہیں اور یہ عمل ایک تکلیف دہ صورتحال پر منتج ہو سکتا ہے۔
حتیٰ کہ اس سے نتھوں کی درمیان موجود سپیکٹرم بھی پنکچر ہو سکتا ہے۔ناک میں خون کا بہاﺅ بھی بہت زیادہ ہوتا ہے، کیونکہ خون کی پانچ نالیاں ناک میں آتی ہیں۔
یہی وجہ ہے کہ انگلی مارنے کی صورت میں ناک سے خون بہہ نکلنے کا امکان بہت زیادہ ہوتا ہے۔ خاص طور پر بچے اس سے زیادہ متاثر ہوتے ہیں۔“