پنجاب پولیس میں تقرر و تبادلوں کا امکان،،کون کہاں تعینات ہو گا ؟ عثمان بزدار کے مستقبل سے بے خبر ،،،افسران وزیر اعلی کو خود انٹرویو دینے پہنچ گئے

لاہور(رپورٹ:اسد مرزا) نئے آئی جی پنجاب کیپٹن (ر)عارف نواز کے چارج سنبھالنے کے بعد پنجاب پولیس میں تبادلوں کے لئے فہرستیں مرتب کی جا رہی ہیں ۔ذرائع کا کہناہے کہ پنجاب پولیس کے اعلی افسران اہم عہدوں پر تعیناتی کے لئے وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کو سفارشیں کر واکے ان سے ملاقات کے خواہشمند ہیں۔ذرائع کا کہناہے کہ آر پی او ملتان فلائیٹ لیفٹیننٹ (ر) وسیم سیال نے سی سی پی او لاہور تعیناتی کے لئے وزیر اعلی پنجاب سے ملاقات کر چکے ہیں جبکہ سی سی پی او لاہور کے دوسرے امیدوار آر پی او فیصل آباد غلام محمد ڈوگر ہیں تاہم ابھی کسی افسر کا نام فائنل نہیں ہو سکا ۔اسی طرح ڈی آئی جی آپریشن لاہورکے لئے سابق ڈی آئی جی لاہور رانا شہزاد اکبر مضبوط امیدوار سمجھے جاتے ہیں جبکہ اس اہم عہدے کے لئے ڈی آئی جی عمران احمر کا نام بھی لیا جا رہا ہے ۔اسی طرح ڈی آئی جی کیپٹن (ر) فیصل رانا کو آر پی او گوجرنوالہ یا فیصل آباد لگائے جانے کا امکان ہے ۔آر پی او راولپنڈی احمد اسحاق جہانگیر کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کا امکان ہے ،اس عہدے کے لئے ڈی آئی جی فیاض دیو کو دوبارہ تعینات کیا جا سکتا ہے۔علاوہ ازیں آر پی او سرگودھا خرم علی شاہ کی کسی اہم عہدے پر تعیناتی کا امکان ہے ۔ ڈیری غازی خان کے آر پی اوعمر شیخ کو تبدیل کر کے ڈی آئی جی راؤ عبدالکریم ،رائے بابر سعید کو تعینات کیا جا سکتا ہے ۔سی پی او ذرائع کا کہناہے کہ آئی جی پنجاب نئے افسران کی تعیناتی کے لئے فہرستیں مرتب کر لی ہیں تب اعلی حکومتی شخصیات سے مشاورت کے بعد افسران کے نام فائنل کئے جائینگے