اسلام آباد میں خوف و ہراس پھیلانے والے ملزم سکندر کی سزا کیخلاف اپیل مسترد

اسلام آباد ہائیکورٹ نے بلیو ایریا میں خوف و ہراس پھیلانے والے ملزم سکندر کی سزا کیخلاف اپیل پر محفوظ فیصلہ سنا دیا، عدالت نے ملزم کی سزا کیخلاف اپیل مسترد کردی اور حکم میں کہا ہے کہ چھ سال قبل بندوق کی نوک پر خوف پھیلانے والا سکندر سزا پوری کرے۔
تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے بلیو ایریا میں خوف و ہراس پھیلانے والے سکندر کی سزا کیخلاف اپیل پر محفوظ فیصلہ سنا دیا، عدالت نے سکندر کی سزا کے خلاف اپیل پر فیصلہ 13 مارچ کومحفوظ کیا تھا۔
چیف جسٹس اطہرمن اللہ اور جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے تفصیلی فیصلہ جاری کیا، عدالت نے 22 صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری کیا، فیصلے کے متن میں کہا گیا ہے کہ پراسیکیوشن نے اپناک یس ثابت کیا، سکندرکی اپیل مسترد کی جاتی ہے۔ فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ٹرائل کورٹ نے سکندر کو کم سزا دینے کی وجہ بیان نہیں کی، وفاق نے سزا بڑھانے کےلئے اپیل بھی دائر نہیں کی، عدالت نے ریمارکس دیئے ہیں کہ چھ سال قبل بندوق کی نوک پرخوف پھیلانے والا سکندر سزا پوری کرے۔
واضح رہے کہ بلیوایریا میں 16 اگست 2013 کوواقعہ پیش آیا تھا۔ 11مئی2017 کو انسداد دہشتگردی عدالت نے ملزم سکندر کو 16سال قید کی سزا سنائی تھی، عدالت نے ملزم سکندر پر ایک لاکھ 10 ہزار روپے جرمانہ بھی عائد کیا تھا۔