ایف بی آر نے نان فائلرزسے متعلق وضاحت کر دی

فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے وضاحت کی ہے کہ نان فائلرز کو غیر منقولہ جائیداد اور گاڑی کی خرید پر چھوٹ نہیں۔
ترجمان ایف بی آر نے بتایا ہے کہ نئے فنانس بل میں نان فائلرز کی قانونی حیثیت کو ہی ختم کردیا ہے، تمام افراد کو ٹیکس ایبل انکم گوشوارے جمع کرانے ہوتے ہیں، بڑی ٹرانزیکشن پر مکمل طریقہ کار دسویں شیڈول کے تحت وضع کیا ہے، ایسے افراد کو نہ صرف ودہولڈنگ اسٹیج پر100 فیصد زیادہ ٹیکس دینا ہوگا۔ ترجمان ایف بی آر نے بتایا کہ ٹیکس کے تعین کے بعد چھپائی گئی آمدن پر جرمانہ اورسزا بھی ہوگی۔
واضح رہے کہ نان فائلر کیلئے جائیداد کی خریداری پر پابندی ختم کردی گئی ہے، نان فائلر 50 لاکھ روپے سے زائد کی جائیداد بھی خرید سکیں گے، مقررہ تاریخ کے بعد گوشوارے جمع کرانے پر بھی ایکٹو لسٹ میں نام شامل ہوگا۔