مشکل سفر ختم ہوگیا اب معیشت ٹیک آف کرے گی: وزیراعظم عمران

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان کی معیشت مستحکم ہو چکی ہے، اب وقت ہے معیشت ٹیک آف کرے گی کیوں کہ کٹھن راستہ تھا جو طے کرلیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت حکومتی ترجمانوں اور سینئر رہنماؤں کا بنی گالا میں اجلاس ہوا جس میں مشیر خزانہ حفیظ شیخ، وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب، وفاقی وزیر مراد سعید اور چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی شریک تھے۔
اجلاس میں سینیٹر فیصل جاوید، جہانگیرترین، معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان اور دیگر رہنما بھی شریک تھے۔
ذرائع کے مطابق اجلاس میں وزیراعظم کے مشیر برائے خزانہ حفیظ شیخ نے بجٹ اور حکومتی اہداف سے متعلق آگاہ کیا جب کہ چئیرمین ایف بی آر شبر زیدی نے ٹیکس اصلاحات اور اہداف سے متعلق اقدامات پر بریف کیا۔
ذرائع نے بتایا کہ تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین نے اجلاس میں زراعت پالیسی سے متعلق پیش رفت پر بریفنگ دی۔
ذرائع کے مطابق اس موقع پر وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ تحقیقاتی کمیشن کا مقصد 24 ہزار ارب قرضوں کا حساب ہے اور تحقیقاتی کمیشن جلد قائم کیا جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان کی معیشت مستحکم ہو چکی ہے، اب وقت ہے معیشت ٹیک آف کرےگی کیوں کہ کٹھن راستہ تھا جو طے کرلیا ہے اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں 30 فیصد کمی آئی ہے۔
اجلاس میں احساس اور غربت خاتمہ پروگرام کے حوالے سے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ احساس پروگرام کا بجٹ 100 ارب سے بڑھا کر191 ارب تک لے گئے ہیں کیوں کہ عوام کو غربت کی لکیر سے اوپر لانا پی ٹی آئی کی اولین ترجیح ہے۔