ملک کے مختلف حصوں میں خصوصی انسداد پولیو مہم کا آغاز

ملک کے مختلف حصوں میں آج سے خصوصی انسداد پولیو مہم کا آغاز ہوگیا، ملک بھر میں ایک کروڑ پچیس لاکھ بچوں کو قطرے پلائیں جائیں گے۔
تفصیلات کے مطابق ملک کے بیشترعلاقوں میں پولیو سے بچاؤ مہم کا آغاز کردیا گیا ، مہم 21جون تک جاری رہے گی، فوکل پرسن بابر بن عطا کا کہنا ہے ایک کروڑپچیس لاکھ بچوں کو قطرے پلانے کا ہدف مقررکیاگیا ہے۔
مہم بنوں، کوئٹہ، لاہور، کراچی ، راولپنڈی سمیت دیگرشہروں میں چلےگی جبکہ پولیو کے حوالے سے خطرناک ترین ڈویژن قرار دیا گیا ہے۔
کراچی کی ایک سو پانچ یونین کونسلوں میں انسداد پولیو مہم آج سے شروع ہورہی ہے، مہم میں پندرہ لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔
کمشنر کراچی نے والدین اور کمیونٹی کے رہنماؤں سےاپیل کی کہ وہ پولیو مہم میں تعاون کریں، 7ہزار سے زائد پولیو ورکرز فرائض انجام دیں گے۔
بلوچستان میں بھی انسداد پولیومہم کے لیے پانچ ہزار سے زائد ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں، جو تیرہ اضلاع میں تین روزہ انسداد پولیومہم کےدوران تیرہ لاکھ سے زائد بچوں کوحفاظتی قطرے پلائیں گے۔
پنجاب میں سات اضلاع منتخب کئے گئے ہیں، پنجاب پولیو پروگرام سلمان غنی کے مطابق تینتالیس لاکھ بچوں کوقطرے پلانےکے لئے چھبیس ہزار پولیو ورکرزا حصہ لیں گے۔
لاہور میں 17 لاکھ سے زائد بچوں ، راولپنڈی میں 7 لاکھ سے زائد بچوں ، ملتان میں9 لاکھ بچوں ، ڈی جی خان میں ساڑھے6لاکھ بچوں اور شیخوپورہ، میانوالی، بھکر میں 2 لاکھ 60 ہزار بچوں کوحفاظتی قطرے پلائے جائیں۔
خیال رہے پنجاب میں د س، سندھ میں تین ، کےپی کےمیں ا ٹھارہ پولیو کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں جبکہ بنوں ڈویژن میں پولیو کیسز کی تعدادتیرہ اورشمالی وزیرستان میں پانچ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔
واضح رہے اس وقت دنیا میں صرف 2 ممالک پاکستان اور افغانستان ایسے ملک ہیں جہاں اب تک پولیو کا مرض مکمل طور پر ختم نہیں ہوسکا ہے جبکہ عالمی ادارہ صحت نے پولیو کیسز رجسٹرڈ ہونے کے سبب پاکستان پر پہلے سے عائد سفری پابندیوں میں توسیع کردی ہے۔