نوازشریف کو جیل میں دل کا دورہ پڑا ؟ انتہائی حیران کن انکشاف سامنے آگیا

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف نے انکشاف کیا ہے کہ نوازشریف دل کے مریض ہیں، میاں صاحب کو تین ہارٹ اٹیک ہوچکے ہیں ۔ انہیں تیسرا ہارٹ اٹیک اڈیالہ جیل میں قید کے دوران ہوا جب نوازشریف ہسپتال جانے کو بھی تیار نہ تھے اور مجھے ایمرجنسی جیل سپریٹنڈنٹ کے کمرے میں بلایا گیا اور کہا…
پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز کا کہنا تھا کہ نوازشریف کروڑوں لوگوں کےدلوں کی دھڑکن ہیں۔ نواز شریف کو 3 مرتبہ دل کے دورے پڑ چکے ہیں جس میں سے 2 مرتبہ گزشتہ 15 سال کے دوران ہوئے۔ ہمیں مکمل معلومات سے بے خبر رکھا گیا ۔ میرے ہسپتال جانے کے مشورے پر انہوں نے کہا کہ مجھے یہ منظور نہیں کہ آپ کو جیل میں چھوڑ کر اکیلا ہسپتال جاؤں ۔  میرے ایک گھنٹے کے اصرار کے بعد وہ ہسپتال چلے گئے لیکن مجھ سے کوئی تفصیلات شیئرنہیں کی گئیں بلکہ اتنا ہی معلوم ہوتا تھا کہ آج بھی ہسپتال میں ہیں۔  آج ہسپتال میں ہیں اور آج واپس آرہے ہیں، پھر اچانک ایک دن ہمارے معالج نے یہ بات بتائی کہ میرے باپ کو اس دن دل کا دورہ پڑا تھا۔  لیکن ہمیں جیل کے عملے ، ہسپتال یا ڈاکٹر نے کوئی ریکارڈ نہیں ملا لیکن پمز سے کچھ ہفتے بعد ڈسچارج سلپ ملی جس میں واضح طورپر لکھا تھا کہ میاں صاحب کو دل کا دورہ پڑا۔  یہ سلپ مریض ، معالج یا اس کے لواحقین کو نہیں دی گئی۔