کپتان سرفراز کی خوداحتسابی، نتیجہ آگیا

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہاہے کہ بھارت کے خلاف ہم بری طرح ہار گئے تھے اس کے بعد ٹیم پر بہت تنقید ہوئی جوکہ زیادہ تر جائز تھی کیونکہ ہم نے غلطیاں کیں تھیں لہذا ہم اس کے مستحق بھی تھے لیکن ہم نے اس تنقید کو مثبت انداز میں لیا اور فیصلہ کیا کہ یہ…

پاکستان کرکٹ بورڈ کیلئے لکھے گئے کالم میں سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ تمام میٹنگز کے بعد ہم پرعزم تھے کہ ہم کم بیک کر سکتے ہیں اور یہ جانتے تھے کہ ہمارے پاس غلطی کی کوئی گنجائش نہیں، انگلینڈ کے خلاف سری لنکا کی اپ سیٹ کامیابی ہمارے لیے حوصلہ افزا تھی اور اس نے یقینی طور پر ٹورنامنٹ کو اوپن کر دیا اور ہمیں یقین دیا کہ اگر ہم آخری چار میچز میں اپنی اہلیت کے مطابق کھیلیں تو جیت سکتے ہیں اور اسی مثبت سوچ کے ساتھ لارڈز پہنچے۔

انہوں نے کہا کہ اللہ کے فضل سے سب کچھ ہمارے حق میں گیا، ہم نے ایک مشکل پچ پر اچھا ٹاس جیتا، اس پچ پر بیٹنگ آسان نہیں تھی لیکن ہم نے ایک نڈر فیصلہ لیا۔ امام الحق اور فخر زمان نے 81 رنز کا اچھا آغاز فراہم کیا جس کے بعد پھر حارث سہیل اور بابر اعظم نے اننگز کو مضبوط کیا۔