ایرانی صدر حسن روحانی نے امریکی پابندیوں کو احمقانہ قرار دے دیا

ایرانی صدر حسن روحانی نے امریکا کی جانب سے آیت اللہ خامنہ ای اور وزیر خارجہ سمیت اعلیٰ فوجی عہدے داروں پر عائد کی گئی پابندیوں کو احمقانہ فیصلہ قرار دے دیا۔
امریکی صدر کی جانب سے تازہ پابندیوں کے اعلان کے بعد سرکاری ٹیلی وژن پر قوم سے خطاب میں ایرانی صدر کا کہنا تھا کہ ہماری برداشت کو بزدلی یا امریکا سے خوفزدہ ہونا نہ سمجھا جائے، اپنے دفاع کے لیے ہر حد تک جائیں گے۔
ایرانی صدر حسن روحانی نے مزید کہا کہ آیت اللہ خامنہ ای کی کوئی جائیداد بیرون ملک موجود نہیں نہ ہی انہیں امریکا میں رہنے کی کوئی تمنا ہے اس لیے اُن پر امریکی پابندیاں احمقانہ پن کے سوا اور کچھ نہیں، امریکا ڈپریشن کا شکار ہے اور اس تناؤ میں بے سر وپا اقدامات کر رہا ہے جو خود اس کی سبکی کا باعث بن رہے ہیں اور صاف ظاہر ہوتا ہے کہ وائٹ ہاؤس ذہنی طور پر اپاہج ہوگیا ہے۔
یاد رہے امریکی صدر نے ایران کے روحانی پیشوا آیت اللہ خامنہ ای اور وزیر خارجہ جواد ظریف سمیت اعلیٰ فوجی عہدے داروں پر سفری اور اقتصادی پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کیا تھا۔