آئس نشے کے حوالے سے شہریار آفریدی نے بڑا دعویٰ کر دیا

وفاقی وزیر برائے انسداد منشیات شہریار آفریدی نے آئس نشے کے حوالے سے ایک نیا انکشاف کیا ہے۔
شہریار آفریدی نے بطور وزیر مملکت برائے داخلہ ایک نجی ادارے کی مسترد شدہ رپورٹ پر اسلام آباد کے تعلیمی اداروں کی 75 فیصد طالبات اور 45 فیصد طالب علموں کو منشیات کا عادی قرار دیا تھا۔
اسلام آباد کے تعلیمی اداروں میں 75 فیصد لڑکیاں اور45 فیصد لڑکے آئس نشہ کرتے ہیں
اسلام آباد کے بڑے بڑے اسکولوں کے طلبہ اور والدین کے سراپا احتجاج ہونے پر شہریار آفریدی نے طلبہ کے منشیات استعمال کرنے سے متعلق بیان واپس لے لیا تھا۔
اب وزیر انسداد منشیات شہریار آفری نے منشیات کے عالمی دن سے متعلق تقریب سے خطاب میں دعویٰ کیا ہے کہ او اے لیول کے طلبہ تعلیمی میدان میں بہتر کارکردگی کے لیے منشیات کا استعمال سویٹس کی صورت میں کرتے ہیں۔
شہریار آفریدی نے مزید کہا کہ کسی تعلیمی ادارے کا ایک بھی شخص منشیات کا شکار نکلا تو پورے ادارے کے خلاف کارروائی ہو گی۔