ہر لاپتہ شخص کی گمشدگی کو ریاست سے نہیں جوڑا جاسکتا: ڈی جی آئی ایس پی آر

ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ ہمیں یہ بات سمجھنی چائیے کہ لا پتہ ہونے والا ہر شخص ریاست سے منسوب نہیں کرنا چاہئے۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور سے چیئرپرسن ڈیفنس آف ہیومن رائٹس آمنہ مسعود جنجوعہ نے ملاقات کی جس میں لاپتہ افراد کے مسئلے پر بات چیت کی گئی۔
اس موقع پر پاک فوج کے ترجمان میجرجنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ ہر لاپتا شخص کی گمشدگی کو ریاست سے نہیں جوڑا جاسکتا، کئی لاپتا افراد افغانستان میں یا کہیں اور کالعدم ٹی ٹی پی کا حصہ ہیں، جب کہ کئی لاپتا افراد ٹی ٹی پی کی طرف سے لڑتے ہوئے مارے گئے، اور جو افراد ریاست کے پاس ہیں وہ قانونی عمل سےگزر رہے ہیں۔

Met Amina Masood Janjua. Issue of missing persons discussed. State is with them to facilitate and address the issue. COAS has constituted a spec cell at GHQ for assisting the process. Our hearts go with the families of missing persons being Pakistanis. (1of2). pic.twitter.com/O5nI4hJ5Kc
— Maj Gen Asif Ghafoor (@OfficialDGISPR) July 5, 2019
ڈی جی آئی ایس پی آر نے آمنہ مسعود جنجوعہ کو بتایا کہ ہمارے دل لاپتا افراد کے اہل خانہ کے ساتھ دھڑکتے ہیں، لاپتہ افراد کے حوالے سے جوڈیشل کمیشن سمیت حکومت اور سیکیورٹی فورسز بھی کام کر رہی ہیں اور اس معاملے پرجی ایچ کیو میں اسپیشل اسسٹنس سیل بھی قائم کیا گیا ہے۔