چیئر مین سینیٹ سے متعلق احسن اقبال کا بڑا دعوی سامنے آ گیا، تفصیلات جانیے اس خبر میں

مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہاہے کہ حکومت چیئر مین سینیٹ کے انتخاب سے فرار حاصل کررہی ہے ، سینیٹ میں اپوزیشن کی اکثریت ہے ، چیئر مین سینیٹ کو تحریک عدم اعتماد آنے کے بعد اخلاقاً ویسے ہی مستعفی ہوجانا چاہئے تھا ۔
تفصیلات کے مطابق لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ مسلم لیگ ن گرفتاریوں کی صورت میں اپنی متبادل قیادت تیار رکھے گی اور قیادت کا خلانہیں پیدا ہونے دیگی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی میڈیا سنسر شپ کی وجہ سے ہزاروں صحافی بے روز گار ہوچکے ہیں ، ہم اس میڈیا سنسر شپ کی مذمت کرتے ہیں۔ ان کاکہنا تھا کہ میر حاصل بزنجو چیئر مین سینیٹ ہونگے ، ہم حکومت سے فوری سینیٹ کا اجلاس بلانے کامطالبہ کرتے ہیں ، حکومت چیئر مین سینیٹ کے انتخاب سے فرار حاصل کررہی ہے ۔
انہوں نے کہا کہ ہم انتقامی کارروائیوں سے گبھرانے والے نہیں ہیں ، ن لیگ لاہور اسلام آباد میں جلسہ کرے گی، شاہد خاقان عباسی کی گرفتاری انتقامی کارروائی ہے ،چیف جسٹس ویڈیو سکینڈل آنے کے انصاف کریں اور نواز شریف فوری رہا کیا جائے ۔ حکومت کے پاس کوئی معاشی ایجنڈا نہیں ہے ، یہ آئی ایم ایف سے ادھار کی ٹیم لی ہوئی ہے ، جس دن پاکستان کی معیشت ڈوبے گی یہ لوگ اپنے بریف کیس پکڑیں گے اور اپنے نوکری پر چلے جائیں گے اور عمران خان بھی اپنے بچوں کے پاس لندن میں چلے جائیں گے ۔ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ پہلے وعدہ کیا گیا تھا کہ 50لاکھ گھربنائے جائیںگے اور اب تین سال میں 18ہزار گھر بنائے جارہے ہیں۔