اسمارٹ فونز کی دنیا میں فولڈنگ اسمارٹ فون کی آمد

 جنوبی کوریا کی مشہور کمپنی سام سنگ نے ستمبر میں فولڈنگ اسمارٹ فون متعارف کرانے کا اعلان کر دیا ہے۔ اس موبائل کی قیمت دو ہزار امریکی ڈالر (تقریباً 3 لاکھ 20 ہزار پاکستانی رو پے) بتائی جا رہی ہے۔
سام سنگ نے فولڈنگ فون اپریل میں متعارف کرانا تھا مگر ابتدائی جائزوں میں سکرین کے مسائل سامنے آنے کے بعد فون کو لانچ کرنے کی تاریخ بدل دی گئی۔ کمپنی کا دعویٰ ہے کہ جو مسائل سامنے آئے تھے اس کو ختم کر دیا گیا، اسمارٹ فون میں بہتری لے آئے ہیں، کمپنی اپنے موبائل فونز کی طلب میں اضافے کی غرض سے آٹھ برس سے فولڈنگ اسمارٹ فون بنانے کی کوشش کر رہی ہے۔
ایک معاشی ماہر کے مطابق آٹھ سال کی تاخیر کے بعد اگر کمپنی تین لاکھ موبائل رواں سال بیچنے میں کامیاب ہو جاتی ہے تو یہ بہت بڑی کامیابی ہو گی۔ اس سے قبل کمپنی پر امید تھی کہ پہلے سال کے دوران 10 لاکھ موبائل بیچنے میں کامیاب ہو جائے گی اور یہ سلسلہ 30 کروڑ موبائل فون بیچنے تک جانا تھا۔ اس دوران کچھ مسائل آئے اور کمپنی کا یہ خواب چکنا چور ہو گیا۔
سام سنگ گلیکسی کا فولڈنگ فون بھی ان مصنوعات میں شامل ہے جو جاپان کے فیصلے سے متاثر ہو گا کیونکہ اس کا انحصار ان کیمیکل فلمز پر ہے جو سومیٹومو کیمیکل نامی جاپانی کمپنی تیار کرتی ہے۔ کمپنی کی طرف سے اعلان کے بعد ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ جاپان اور جنوبی کوریا تجارتی تنازع کیوجہ سے دنیا بھر میں موبائل فونز کی ڈیلیوری متاثر ہو گی۔
یاد رہے کہ جاپان نے سام سنگ سمیت موبائل اور بجلی کے آلات بنانے والی کئی بڑی جنوبی کورین کمپنیوں کے لیے خام مال کی برآمدات کو محدود کر دیا تھا۔ یہ فیصلہ جنوبی کوریا کے عدالتی فیصلے کے بعد کیا تھا۔ فیصلے میں عدالت نے جنگ عظیم دوم کے دوران جبری مشقت کروانے والی جاپانی کمپنیوں کو کوریا کے متاثرہ شہریوں کو معاوضہ دینے کا حکم دیا تھا۔
برآمدات محدود کرنے کے جاپانی فیصلے کی وجہ سے ٹیکنالوجی کمپنیوں کی سپلائی چین پر اثرات اور مصنوعات کی قیمتوں میں ممکنہ اضافے کے حوالے سے بین الاقوامی سطح پر تشویش پائی جا رہی ہے۔