امریکی مسلم کانگریس خواتین الہان عمر اور راشدہ طلیب کے ویزے پر اسرائیل کیجانب سے پابندی عائد

انتہا پسند یہودی غیرقانونی ریاست اسرائیل نے امریکی کانگریس کی مسلم خواتین پر پابندی عائد کردی ہے۔
اسرائیل کا مسلمانوں کے خلاف تعصب کم ہونے کا نام نہیں لے رہا امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے نسلی امتیاز کا نشانہ بننے والی کانگریس خواتین الہان عمر اور راشدہ طلیب پر اب اسرائیل میں بھی تعصب کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ راشدہ طلیب کا تعلق فلسطین سے ہے جبکہ الہان عمر کا تعلق صومالیہ سے ہے۔
دونوں خواتین نے فلسطین کی مقبوضہ مغربی پٹی کا دورہ کرنا تھا لیکن اسرائیل کی جانب سے دونوں کے ویزے منسوخ کر دے گئے ہیں اور اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو کے کہنے پر دونوں خواتین کے ملک کے داخلے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔
پابندی کے ردعمل میں الہان عمر نے نیتن یاہو اور ٹرمپ کو اسلامو فوبیا کا شکار قراردیا ہے جبکہ راشدہ طلیب نے اسرائیل کے فیصلے کو جمہوری اقدار کی توہین اور "کمزوری کی علامت” قرار دیا ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ امریکی صدر اور اسرائیلی وزیراعظم کی جانب سے اس رویے پر انہیں کوئی حیرت نہیں کیونکہ انہیں امریکی صدر نے متعدد بار نسلی امتیاز پر مبنی رویے کا نشانہ بنایا ہے ۔