شیخوپورہ : لیڈی پولیس اہلکار تھپڑ مارنے والے وکیل کی ضمانت پر برس پڑی، بڑا بیان دے دیا

شیخوپورہ کے علاقے فیروز والا میں لیڈی کانسٹیبل کو تھپڑ مارنے والے وکیل کی ضمانت ہوگئی۔
وکیل کی بدسلوکی کا شکار لیڈی پولیس اہلکار وکیل کی ضمانت پر برس پڑیں اور کہا کہ کیا یہی ہے عورت کی عزت کہ کوئی بھی اسے سرعام تھپڑ مار کر چلا جائے۔ لیڈی کانسٹیبل نے چیف جسٹس پاکستان اور صدر مملکت سے واقعے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا۔
جج نے تشدد کرنے والے وکیل احمد مختار کا نام احمد افتخار لکھنے کی غلطی کا فائدہ ملزم کودیا اور ضمانت دے دی، لیڈی کانسٹیبل سے پوچھا تک نہیں کہ تمھیں تھپڑ کس نے مارا؟ کیا ایف آئی آر کاٹنے والے پولیس اہلکار نے اپنی ہی پیٹی بند ساتھی کے خلاف سازش کی؟ پنجاب پولیس اپنا مقدمہ صحیح طور پر نہ لڑسکی، دوسروں کو انصاف کیا دلائے گی؟ اس واقعے نے نئے سوالات کھڑے کردیے ہیں۔