امریکی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن سے اچانک کیوں استعفیٰ لیا؟ کھلبلی مچ گئی

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن سے استعفیٰ لے لیا۔
فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق امریکی صدر نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کیا کہ ‘میں نے جان بولٹن سے ان کا استعفیٰ مانگا تھا، جو انہوں نے صبح مجھے دے دیا ہے’۔
انہوں نے مزید کہا کہ ‘میں نے گزشتہ رات جان بولٹن سے کہا تھا کہ ان کی سروسز وائٹ ہاؤس کو مزید درکار نہیں ہیں’۔
امریکی صدر کا کہنا تھا کہ ان کی جگہ نئے قومی سلامتی کے مشیر کا اعلان آئندہ ہفتے کردیا جائے گا۔
امریکی صدر ٹرمپ نے کہا انہیں جان بولٹن کی بہت سی تجاویز سے شدید اختلاف تھا، اسی لئے جان بولٹن سے استعفیٰ مانگا تھا جو انہوں نے آج صبح دے دیا ہے۔
امریکی صدر نے جان بولٹن کی خدمات پر انہیں خراج تحسین بھی پیش کیا ہے۔
 

I informed John Bolton last night that his services are no longer needed at the White House. I disagreed strongly with many of his suggestions, as did others in the Administration, and therefore….
— Donald J. Trump (@realDonaldTrump) September 10, 2019