پاک-چین وزرائے خارجہ کے مشترکہ اعلامیہ میں مقبوضہ کشمیر کا حوالہ، بھارت کا تشویش کا اظہار

چین کے وزیر خارجہ وانگ ژی کے 7 اور 8 ستمبر کے پاکستان کے دورے کے بعد مشترکہ اعلامیہ میں مقبوضہ کشمیر کا حوالہ دینے پر بھارت نے تشویش کا اظہار کردیا۔
بھارتی میڈیا ‘دی ہندو’ کی رپورٹ کے مطابق بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے پاک-چین مشترکہ اعلامیے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور چین کو آزاد کشمیر میں پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) سے متعلقہ سرگرمیاں بند کرنی چاہیے۔
انہوں نے کہا کہ ‘ہم چینی وزیر خارجہ کے حالیہ دورے کے دوران چین اور پاکستان کی جانب سے جاری مشترکہ اعلامیے میں جموں و کشمیر کا حوالہ مسترد کرتے ہیں، جموں و کشمیر بھارت کا اہم حصہ ہے’۔
رویش کمار کا کہنا تھا کہ ‘بھارت نے پاکستان اور چین دونوں کو آزاد جموں و کشمیر میں سی پیک کے منصوبوں پر تشویش کا اظہار کرچکا ہے جو بھارت کا حصہ ہے اور اس پر غیر قانونی طور پر پاکستان نے 1947 سے قبضہ کر رکھا ہے’۔
انہوں نے کہا کہ ‘ہم تمام متعلقہ جماعتوں سے اس طرح کے کام کو بند کرنے کی درخواست کرتے ہیں’۔