ڈی جی آئی ایس پی آر کا مسلح افواج سے متعلق زید حامد کو مشورہ

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے دفاعی تجزیہ کار زید حامد کو تنبیہ کی ہے کہ وہ مسلح افواج کے حوالے سے غلط معلومات نہ پھیلایا کریں۔
زید حامد نے ایک ٹویٹ میں یہ دعویٰ کیا تھا کہ بھارتی پائلٹ ابھی نندن کی رہائی کے معاملے پر عمران خان حکومت نے پاک فضائیہ کے تحفظات کو پس پشت ڈال دیا تھا۔ ’ مجھے پتا ہے کہ پاک فضائیہ عمران خان کی طرف سے ابھی نندن کی رہائی پر ناراض تھی، یہ ایک بہت بڑی شکست تھی، جس وقت پرجوش پاک فضائیہ سہمے ہوئے دشمن کو تباہ کرنے کیلئے دہاڑ رہی تھی تو اسے عمران خان کی خوفزدہ حکومت نے پیچھے کھینچ لیا، یہ تو حوصلے اور وژن کی کمی کے باعث اپنے سائے سے بھی خوفزدہ ہیں۔‘
زید حامد کی جانب سے جب یہ دعویٰ کیا گیا تو ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے انہیں مسلح افواج کے معاملات پر تبصرہ کرتے ہوئے احتیاط سے کام لینے کا مشورہ دیا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا برائے مہربانی غلط معلومات نہ پھیلائیں بالخصوص مسلح افواج کے بارے میں ایسا کرنے سے گریز کریں۔ قومی فیصلے اداروں کے باہمی صلاح مشورے سے لیے جاتے ہیں اس لیے ان معاملات کے بارے میں اتنے واضح دعوے نہ کریں جن کے حقائق کے بارے میں آپ کو کوئی علم نہیں ہے۔