ترکی کے شام میں فوجی آپریشن میں شدت، 400 سے زائد کرد جنگجو جاں بحق

ترکی کے شام میں فوجی آپریشن میں شدت آگئی ہے ترکی نے شام کے پانچ میل تک کے سرحدی علاقے میں قبضے کا دعویٰ بھی کیا ہے اورتقریبا چار سو سے زائد کرد باغیوں کو جان بحق کیا جا چکا ہے۔
امریکی پینٹاگون نے جاری بیان میں بتایا ہے کہ ترکی کے شام میں فوجی آپریش کے دوران امریکی فوجی اڈوں پر بھی بمباری کی گئی ہے لیکن کسی جانی نقصان کی اطلاعات نہیں ہیں ترکی نے کہا ہے کی امریکی فورسز کو نشانا بنانا مقصد نہیں تھا لیکن بمباری کے دوران شلینگ سے امریکی اڈے متاثر ہوئے،امریکا کی جانب سے ترکی پر معاشی پابندیاں لگانے پر غور کیا جارہا ہے۔
روس کے صدر ولادی میر پوتین نے خبر دار کیا ہے شام میں ترک فوجی کارروائی کے نتیجے ‘داعش’ شام میں دوبارہ سر اٹھا سکتی ہے۔
دوسری جانب ہالینڈ کی طرف سے شمال مشرقی شام میں ترکی کے حملے کے بعد اسلحے کی نئی کھیپ کی برآمد معطل کر دی گئی ہے۔